یمنی فوج کا سعودی دارالحکومت پر میزائل، ڈرون حملہ اہم ہدف نشانہ

0

یمن کی فوج اور قبائل پر مشتمل عوامی فورس کے جوانوں نے جمعرات کو نجران میں ایک کارروائی میں جارح سعودی اتحاد کی کئی بکتربند گاڑیاں تباہ اور متعدد فوجیوں کو ہلاک کردیا یمن کے تیل بردار بحری جہاز روکنے کیوجہ سے ہسپتال بجلی سے محروم ہوگئے۔۔۔

صنعا (میزان نیوز) یمن کی مسلح افواج نے سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض میں ایک اہم ہدف پر میزائل حملہ کیا ہے، یمن کی مسلح افواج کے ترجمان یحی السریع نے اپنے ایک ٹوئٹ میں لکھا ہے کہ یمن کی فضائیہ اور میزائل ڈیفنس فورس نے مشترکہ فوجی آپریشن کے دوران سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض میں ایک اہم ہدف کو میزائل سے نشانہ بنایا ہے، انہوں نے بتایا کہ اس حملے میں اندرون ملک تیار کیے جانے والے صماد تین قسم کے چار ڈرون طیاروں نے حصہ لیا اور ذوالفقار نامی میزائل فائر کیا گیا، یمن کی مسلح افواج کے ترجمان کا کہنا تھا کہ اگر یمن کا محاصرہ اور جارحیت کا سلسلہ اسی طرح جاری رہا تو آل سعود حکومت کو تباہ کن جواب دیا جائے گا، تاہم یمنی دارالحکومت صنعا کے فوجی ذرائع نے ریاض پر حملے کا ہدف بیان نہیں کیا تاہم یہ بتایا جارہا ہے کہ ہدف فوجی اور سیاسی نوعیت کا ہے، قبل ازیں یمن کی فوج اور قبائل پر مشتمل عوامی فورس کے جوانوں نے جمعرات کی صبح نجران میں ایک کارروائی میں جارح سعودی اتحاد کی کئی بکتربند گاڑیاں تباہ اور دشمن کے متعدد فوجیوں کو ہلاک کردیا تھا، سعودی عرب اپنے اتحادی ملکوں امریکا اور برطانیہ اور بعض عرب ممالک کی حمایت سے مارچ دو ہزار پندرہ سے یمن پر وحشیانہ حملے کررہے ہیں، اس عرصے میں دسیوں ہزار یمنی شہری شہید و زخمی جبکہ دس لاکھ سے زائد یمنی بے سر و سامانی کی زندگی گزارنے پر مجبور ہو گئے ہیں، جبکہ یمنی بندرگاہوں کے محاصرے اور تیل بردار بحری جہازوں کو روکنے کیوجہ سے ہسپتال بجلی سے محروم ہوچکے ہیں اور مریضوں کا علان اور آپریشن کی صلاحیت محدود ہوکر رہ گئی ہے۔

Share.

About Author

Leave A Reply