یمن: سعودی انٹیلی جنس نے انصار اللہ کے لیڈر کے بھائی کو قتل کردیا

0

یمنی فوج کے نشانہ بازوں نے سرحدی صوبہ حجہ میں سعودی عرب کے 8 فوجیوں کو ہلاک ی کردیا ہے یمنی فوج نے سعودی جارحیت کے جواب میں جنوبی سعودی عرب کےعلاقے عسیر کے فوجی ٹھکانوں پر زلزال بیلسٹک میزائلوں سے حملہ کیا ہے۔۔۔

صنعا (میزان نیوز) یمن کے نشانہ باز فوجی یونٹ کے ارکان نے سرحدی خلاف ورزی پر سعودی عرب کے 8 فوجی ہلاک کردیا ہے، المیسرہ کی رپورٹ کے مطابق یمنی فوج کے اسنائپروں کے حملوں میں  یمن کے مغرب میں واقع سرحدی صوبہ حجہ میں سعودی عرب کے 8 فوجی ہلاک اور متعدد زخمی کیا ہے، اُدھر یمن کی وزارت داخلہ نے جمعہ کے روز اعلان کیا ہے کہ یمن کی قومی حکومت میں شامل سب سے بڑی جماعت تحریک انصار اللہ کے سیکریٹری جنرل عبدالملک بدرالدین الحوثی کے بھائی ابراہیم بدرالدین الحوثی کو سعودی انٹیلی جنس کے سفاک اہلکاروں نے شہید کردیا ہے، دوسری طرف یمنی فوج نے سعودی اتحاد کی جارحیت کے جواب میں جنوبی سعودی عرب کے علاقے عسیر میں سعودی اتحاد کے فوجی ٹھکانوں پر زلزال ایک قسم کے تین بیلسٹک میزائلوں سے حملہ کیا، میڈیا رپورٹس کے مطابق جنوبی سعودی عرب میں واقع عسیر کے فوجی ٹھکاوں پر کئے جانے والے اس حملے میں سعودی اتحاد کے کئی فوجی ٹھکانے تباہ اور اس اتحاد کے دسیوں فوجی اہلکار ہلاک و زخمی ہو گئے، جبکہ یمنی فوج کے ڈرون طیاروں نے بھی جمعرات کی رات جنوبی سعودی عرب میں ابہا بین الاقوامی ہوائی اڈے کو نشانہ بنایا، ذرائع کے مطابق یمن جنگ میں سعودی عرب کو تاریخی شکست کا سامنا ہے اور یمن کے خلاف سعودی عرب کے فوجی اتحاد میں بھی دراڑیں پڑ گئی ہیں، جنوبی یمن کے شہر عدن میں متحدہ عرب امارات کے اتحادیوں اور سعودی عرب سے وابستہ یمن کے مستعفی صدر منصور ہادی کے اتحادیوں کے درمیان جاری جھڑپوں کے نتیجے میں عدن ہوائی اڈے سے پروازوں کا سلسلہ منقطع ہوگیا، شہر عدن کے ایک ذریعے کا کہنا ہے کہ عدن ائیرپورٹ کے قریب جھڑپیں جاری رہنے کی بنا پر عدن ائیرپورٹ سے تمام پروازیں منسوخ کردی گئیں جبکہ سیکورٹی کی بحرانی صورت حال کی بنا پر تمام پروازوں کو سیؤن ائیرپورٹ منتقل کردیا گیا جہاں سے ان پروازوں کا سلسلہ جاری رکھا گیا۔

Share.

About Author

Leave A Reply