پیپلز پارٹی رہنما کی تجاوزات مسمار بلاول نےسیاسی انتقام قرار دے دیا

0

پیپلز پارٹی کے رہنما سابق ڈپٹی چیئرمین سینیٹ نیئر بخاری کے قبضے سے 25 کنال اراضی واگزار کرائی لی یہ زمین نیئر بخاری کے قبضے سے واگزار کرائی گئی ہے زمین قائد اعظم یونیورسٹی کی ملکیت ہے ۔۔۔۔۔۔۔

اسلام آباد (میزان نیوز) پاکستان کے دارالحکومت اسلام آباد کے ترقیاتی ادارے کیپٹل ڈیولپمنٹ اتھارٹی (سی ڈی اے) کی جانب سے پاکستان پیپلز پارٹی سیکرٹری جنرل نیئر بخاری کے گھر سے ملحق تجاوزات کو ہٹانے پر پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے تجاوزات آپریشن کی مذمت کرتے ہوئے اس اقدام کو سیاسی انتقام قرار دے دیا، ضلعی انتظامیہ کی جانب سے قائد اعظم یونیورسٹی کی 100 کنال اراضی واگزار کرالی گئی ہے، سابق چیئرمین سینیٹ نیئر بخاری کے قبضے سے بھی 25 کنال زمین چھڑائی گئی ہے، پی پی پی بلاول بھٹو زرداری نے سی ڈی اے کی کارروائی کو سیاسی انتقام سے تعبیر کرتے ہوئے کہا کہ نیر بخاری کے گھر پر آپریشن شرمناک ہے اور یہ کوشش سیاسی مخالفین پر دباؤ ڈالنا ہے، ان کا کہنا تھا کہ سیکریٹری جنرل پیپلز پارٹی نیر بخاری کو انتقام کا نشانہ بنایا جا رہا ہے، بلاول بھٹو نے بنی گالا میں بھی آپریشن کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ آپریشن کرنا ہے تو بنی گالا میں کیا جائے کیونکہ بنی گالا میں عمران خان کے گھر کی تعمیر غیر قانونی ہے، ان کا کہنا تھا کہ ایک نہیں دو پاکستان بنائے جا رہے ہیں اور نیر بخاری کے گھر پر آپریشن سیاسی دباؤ کا ہتھکنڈا اور سیاسی آواز دبانے کی کوشش ہے، آپریشن کے دوران سابق ڈپٹی چیئرمین سینیٹ نیئر بخاری کے گھر کے ساتھ قائم تجاوزات بھی گرادی گئیں، انہوں نے گھر کے ساتھ باڑے تعمیر کرا رکھے تھے، ان کے قبضے سے 25 کنال اراضی واگزار کرائی گئی ہے، خیال رہے کہ جو زمین نیئر بخاری کے قبضے سے واگزار کرائی گئی ہے زمین قائد اعظم یونیورسٹی کی ملکیت ہے، یہ زمین پیپلز پارٹی کی حکومت کے دوران مختلف سینیٹرز کو غیر قانونی طریقے سے دی گئی تھی، سی ڈی اے نے حال ہی میں فیصلہ کیا تھا کہ قائد اعظم یونیورسٹی کی اراضی کو واگزار کرایا جائے گا، قائد اعظم یونیورسٹی کی جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے اراکین کے مطابق یونیورسٹی کی 298 ایکڑ اراضی پر قبضہ کیا گیا ہے اور کمیٹی کے اراکین نے اس معاملے پر شدید احتجاج بھی کیا تھا جس کے بعد سی ڈی اے اور اسلام آباد انتظامیہ کے ذرائع کا کہنا تھا کہ قائد اعظم یونیورسٹی کی راضی کی واپسی کیلئے کارروائی کا منصوبہ بنایا جارہا ہے، یاد رہے کہ سپریم کورٹ نے بنی گالا میں غیر قانونی تعمیرات کے حوالے سے کیس میں وزیراعظم عمران خان کو ہدایت کی تھی کہ وہ سب سے پہلے اپنے گھر کو ریگولرائز کرائے، وزیراعظم عمران خان نے چند برس قبل سپریم کورٹ کو بنی گالا میں غیر قانونی تعمیرات کے حوالے سے خط لکھا تھا۔

Share.

About Author

Leave A Reply