وینزویلا بھیجے گئےتیل جہازوں کو روکا تو امریکا کو کرارا جواب دینگے، ایران

0

عراق اور شام میں امریکا کیلئے کوئی جگہ نہیں امریکا غیر قانونی طور پر ان دو عرب ممالک میں ڈیرے جمائے ہوئے ہے صدر ٹرمپ اپنے غیر منطقی، غیر سنجیدہ اور احمقانہ گفتگو کے باعث امریکی صدر کی حیثیت سے اپنا وقار کھو بیٹھے ہیں۔۔۔

تہران (میزان نیوز) ایرانی وزیرِ خارجہ جواد ظریف نے اقوامِ متحدہ کو لکھے گئے ایک خط میں خبردار کیا ہے کہ اگر امریکا نے وینزویلا کیلئے بھیجے گئے تیل بردار ایرانی جہاز روکنے کی کوشش کی تو نتائج کا ذمہ دار بھی امریکا ہی ہوگا، خبروں کے مطابق اس وقت بحیرہ کریبین میں کم از کم پانچ تیل بردار ایرانی جہاز وینزویلا کی طرف محو سفر ہیں جن پر تقریباً 2000 ارب ایرانی ریال کی مالیت کا تیل اور دیگر پیٹرولیم مصنوعات موجود ہیں، امریکی بحریہ نے بحیرہ کریبین میں اپنے جنگی جہاز تعینات کرنا شروع کردیئے ہیں جن کا مقصد ایرانی آئل ٹینکرز کو وینزویلا پہنچنے سے روکنا ہے، جس پر ایران نے امریکا کو خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایسی کسی بھی امریکی کوشش کا ایران کی جانب سے فوری اور بھرپور جواب دیا جائے گا، ایک روز قبل  ایران کے سپریم لیڈر امام سید علی خامنہ ای نے صدر ٹرمپ کی پالیسیوں کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ عنقریب امریکیوں کو عراق اور شام سے بے دخل کردیا جائے گا، عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق ایران کے روحانی پیشوا اور رہبر انقلاب اسلامی امام علی خامنہ ای نے کہا ہے کہ افغانستان، عراق اور شام میں امریکی کارروائیوں اور دہشت گردوں کی معاونت سے لوگوں کے دلوں میں امریکا کیلئے نفرت پیدا ہوگئی ہے اور اب عراق اور شام میں امریکا کیلئے کوئی جگہ نہیں ہے، امام سید علی خامنہ ای کا مزید کہنا تھا کہ امریکا غیر قانونی طور پر ان دو عرب ممالک میں ڈیرے جمائے ہوئے ہے تاہم اب امریکی کارروائیوں کے باعث دنیا بھر میں اس کے خلاف پیدا ہونے والی نفرت کی وجہ سے عنقریب امریکیوں کو عراق اور شام سے بیدخل کردیا جائے گا، ایران کے روحانی پیشوا نے امریکی صدر کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ صدر ٹرمپ اپنے غیر منطقی، غیر سنجیدہ اور احمقانہ گفتگو کے باعث اپنا وقار کھو بیٹھے ہیں اور اپنے جارحانہ عزائم کو بڑھاوا دیتے ہوئے افغانستان، عراق اور شام میں عسکری کارروائیاں کر رہے ہیں۔

Share.

About Author

Leave A Reply