نوازشریف، فوجی سربراہ پر بزدلانہ الزامات ریاست فوری جواب دے

0

گوجرانوالہ جلسے میں بچارے بلاول بھٹو کو نواز لیگ اور فضل الرحمٰن نے خوب اچھی طرح سے بچہ جھمورا بناکر پیش کیا، یہ موقع پنجاب کے پیپلزپارٹی کے رہنماؤن نے ہی دیا جو اس جلسے میں اپنے حامیوں اور کارکنوں کو لانے میں ناکام رہے۔۔۔

گوجرانوالہ (میزان نیوز) مسلم لیگ(ن) کے تاحیات قائد نواز شریف نے ایک بار پھر بھارتی بیانیئے کو آگے بڑھاتے ہوئے مسلم فوج کے سپہ سالار پر دشمن کے دیئے تیروں کی بارش کردی، گوجرانوالہ جلسہ دراصل مسلم لیگ(ن) کا پاور شو تھا پورے پنجاب سے لوگوں کو جمع کیا جبکہ کارکنان کی تعداد بھی قابل ذکر تھی، کھانا پانی سب میسر تھا، پیسے خرچ کئے تھے، ساری کہانی جلسہ شروع ہونے سے قبل ہی واضح تھی کہ خاص خطابات نوازشریف، مریم شریف اور فضل الرحمٰن کریں گے، نوازشریف نے اپنے خطاب میں جس طرح سے پاکستان کی دشمن کی آنکھوں میں گھٹکنے والی مسلم فوج کے سپہ سالار کو ہدف تنقید بنایا قہ کسی پاکستانی اور مسلمان کیلئے قابل قبول نہیں ہے، نوازشریف کی پوری تقریر کا جائزہ لیا جائے تو اُن کا مذموم مقصد واضح اور روشن ہے وہ فوج کو تقسیم کرکے نقصان پہنچانے کا مذموم بھارتی اور اسرائیلی کھیل کھیل رہے ہیں، محب وطن اور اسلام کی سربلندی کا خواب دیکھنے والے پوچھتے ہیں کہ ریاست اس ملک دشمنی پر مبنی سازش پر کب فیصلہ کُن کارروائی کرئے گی، کب ملک دشمن قوتوں کا جواب دیا جائے گا، یہ ہر پاکستانی کو معلوم ہے کہ فوج کئی محاذوں پر لڑرہی ہے، لیکن نوازشریف کا خطرہ بہت گہرا ہے اور اندر سے بزدلانہ وار ہے، نواز شریف کے موقع پرست سیاستدان ہونے پر کسی کو شک نہیں، آصف زرداری کھلے عام اور نجی محفلوں میں نوازشریف کی اس صفت کو بہت ایمانداری سے ثابت کرتے ہیں، آصف زرداری تو یہ بھی دعویٰ کرتے ہیں کہ نوازشریف کو وہ سب سے زیادہ سمجھتے ہیں، گوجرانوالہ جلسے میں بچارے بلاول شریف معاف کئے گا بلاول بھٹو کو نواز لیگ اور فضل الرحمٰن نے خوب اچھی طرح سے بچہ جھمورا بناکر پیش کیا، یہ موقع پنجاب کے پیپلزپارٹی کے رہنماؤن نے ہی دیا جو اس جلسے میں اپنے حامیوں اور کارکنوں کو لانے میں ناکام رہے، پیپلزپارٹی صوبائی جماعت بن چکی ہے اور بہت جلد کچھ اضلاع تک محدود ہوجائے گی یا پھر نوازلیگ کا ایک ونگ بن جائے گی۔

Share.

About Author

Leave A Reply