مودی کیلئے انسانی حقوق ایورڈ بلگیٹس فاؤنڈیشن خلاف آن لائن پٹیشن

0

آن لائن پٹیشن کی مہم چلانے والے رکن ارجن سیٹھی نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے پیغام میں کہا اگر مودی کو ایوارڈ دیا جاتا ہے تو پھر یہ انسانی حقوق کی پامالی بھارتی سول سائٹی اور انصاف کیلئے لڑنے والوں کی حوصلہ شکنی ہے۔۔۔

واشنگٹن (میزان نیوز) مقبوضہ جموں و کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین پامالی کے باوجود بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کو ایوارڈ دینے کے اعلان پر دنیا کے امیر ترین افراد میں شمار ہونے والے بل گیٹس کی جانب سے قائم کیے گئے ادارے بل اینڈ ملینڈا گیٹس فاؤنڈیشن کو شدید تنقید کا سامنا ہے، الجزیرہ کی رپورٹ کے مطابق جنوبی ایشیائی نژاد امریکی ماہرین تعلیم وکلا اور انسانی حقوق کے کارکنوں کی جانب سے بل گیٹس فاؤنڈیشن کے فیصلے کے خلاف آن لائن پٹیشن شروع کردی گئی ہے جس میں موقف اپنایا گیا ہے کہ مودی کی حکمرانی میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں ہورہی ہیں، اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ ہم جانتے ہیں کہ مودی کو ان کے صفائی کے کام پر ایوارڈ دیا جارہا ہے لیکن یہ تضاد نظر آتا ہے کہ انسانی حقوق کے حوالے سے ایوارڈ ایک ایسے آدمی کو دیا جائے جو گجرات کے قصائی کے نام سے مشہور ہے، مہم کے رکن ارجن سیٹھی نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر میں اپنے پیغام میں کہا کہ اگر مودی کو ایوارڈ دیا جاتا ہے تو پھر یہ انسانی حقوق کی پامالی، بھارتی سول سائٹی اور انصاف کیلئے لڑنے والوں کی حوصلہ شکنی اور بھارت میں اقلیتی حقوق کی کوئی حیثیت نہ ہونے کا پیغام سمجھا جائے گا، انہوں نے مہم میں حصہ لینے کی اپیل کرتے ہوئے گیٹس فاؤنڈیشن سے مطالبہ کیا کہ وہ مودی کو یہ ایوارڈ نہ دے، خیال رہے کہ گیٹس فاؤنڈیشن کی جانب سے نریندر مودی کو بھارت کے قوم پرست رہنما سواچ بھرت ابھیان کی کلین انڈیا مشن کے تحت پورے ملک میں لاکھوں بیت الخلا تعمیر کرکے اہم مسئلہ کی طرف توجہ دینے کے اعتراف میں ایوارڈ دینے کا اعلان کیا گیا تھا، یاد رہے کہ نریندر مودی پر 2002ء میں گجرات فسادات میں ایک ہزار سے زائد مسلمانوں کے قتل کا الزام عائد کیا گیا تھا اور اس وقت وہ گجرات کے وزیراعلیٰ تھے تاہم بھارتی عدالت نے شک کی بنیاد پر انہیں الزامات سے بری کردیا تھا، گجرات فسادات کے پیش نظر امریکا نے 2005ء میں انٹرنیشنل ریلیجیس فریڈم ایکٹ کے تحت مودی کی امریکا داخلے پر پابندی عائد کردی تھی، امریکا نے مودی پر عائد سنگین پابندی 2014ء میں اس وقت ہٹادی تھی جب وہ عام انتخابات میں کامیابی کے نتیجے میں پہلی مرتبہ بھارت کے وزیراعظم منتخب ہوئے تھے، الجزیرہ کی رپورٹ کے مطابق گیٹس فاؤنڈیشن نے بیان میں اپنے فیصلے کا دفاع کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت صفائی کے حوالے سے اقوام متحدہ کے ادارے اسسٹین ایبل ڈیولپمنٹ گولز کی مہم کے تحت بہتری کی جانب گامزن ہے، گیٹس فاؤنڈیشن کا کہنا تھا کہ لاکھوں افراد بالخصوص خواتین اور بچوں کی بہتر زندگی اور صحت کے حوالے سے صفائی کا شعبہ بنیادی حیثیت رکھتا ہے، دوسری جانب انسانی حقوق کے رضاکاروں نے گیٹس فاؤنڈیشن کی وضاحت کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ صفائی ستھرائی کے کام کے بدلے انسانی حقوق کی خلاف ورزی کو نظرانداز نہیں کیا جاسکتا ہے۔

Share.

About Author

Leave A Reply