انڈیا انسانی حقوق تنظیم ایمنسٹی انٹرنیشنل کو ہراساں کررہا ہے

0

حملے دھمکیاں اور ہراسانی کی وجہ ایمنسٹی انٹرنیشنل کا انسانی حقوق کیلئے کام ہے اور صاف بات ہے کہ مودی حکومت ہمارے سوالات کے جواب نہیں دینا چاہتی چاہے وہ دہلی فسادات کی تحقیقات ہوں یا جموں و کشمیر میں آوازیں دبانے کی کوششیں ہوں۔۔۔

نئی دہلی (میزان نیوز) انسانی حقوق کی عالمی تنظیم ایمنسٹی انٹرنیشنل نے اعلان کیا ہے کہ انھیں انڈیا میں انسانی حقوق کے بڑھتے رجحان کی نشاندہی کرنے کی بنا پر انڈین حکومت کی جانب سے ہراساں کیا جارہا ہے اور وہ اس وجہ سے انڈیا میں اپنے آپریشن بند کررہے ہیں، خیال رہے مودی کی ہندو قوم پرست حکومت ناصرف مسلمانوں اور اور غیر ہندو اقلیتوں کے حقوق سلب کررہی ہے بلکہ ہندوؤں کی پسماندہ فرقوں کو بھی ظلم کا نشانہ بنا رہی ہے، ایمنسٹی انٹرنیشنل نے انڈیا کی حکومت پر الزام لگایا ہے کہ وہ انسانی حقوق کی تنظیموں کے خلاف ایک مہم چلا رہی ہے، ایمنسٹی کے مطابق ان کے بینک اکاؤنٹ منجمد کردیئے گئے ہیں اور انھیں اپنے ملازمین کو فارغ کرکے ملک میں جاری اپنا تمام کام روکنا پڑا ہے، انڈیا کی حکومت نے اب تک ان سرکاری طور پر کوئی ردعمل نہیں دیا ہے، ایمنسٹی انٹرنیشنل کے انڈیا میں سینیئر ریسرچ ڈائریکٹر رجت کھوسلہ نے میڈیا کو بتایا کہ انھیں حکومت کی جانب سے غیرمعمولی طور پر ہراساں کیا جارہا ہے اور تنظیم کو ایسی صورتحال کا سامنا ہے جس میں منظم طریقے سے کیے جانے والے حملے، دھمکیاں اور ہراسانی شامل ہیں، اس سب کی وجہ ہمارا انسانی حقوق کیلئے کام ہے اور صاف بات ہے کہ مودی حکومت ہمارے سوالات کے جواب نہیں دینا چاہتی، چاہے وہ دہلی فسادات میں ہماری تحقیقات ہوں یا جموں و کشمیر میں آوازیں دبانے کی کوششیں، گزشتہ ماہ جاری ہونے والی ایک رپورٹ میں ایمنسٹی نے بتایا کہ دہلی پولیس نے فروری میں ہونے والے فسادات کے دوران انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں کیں۔

Share.

About Author

Leave A Reply