عراق میں یورپ اور برطانیہ ہم جنس پرستی کی حوصلہ افرائی کررہے ہیں

0

عراق میں اتوار کو یورپی یونین کے دفتر، کینیڈا اور برطانیہ کے سفارتخانوں نے بغداد میں پہلی مرتبہ عراقی سرزمین میں ہم جنس پرستوں کا پرچم لہرایا عراقی وزارت خارجہ نے یورپی یونین ممالک سے عراقی قوانین کا احترام کرنے کا مطالبہ کردیا۔۔۔

بغداد (میزان نیوز) عراق میں یورپی یونین کے دفتر اور بعض یورپی ممالک کی جانب سے بغداد میں ہم جنس پرستی کے پرچم کو لہرانے پر اس ملک کی مقتدر سیاسی اور مذہبی جماعتوں نے کی مذمت کرتے ہوئے عراق کے عوام اور حکومت سے معافی مانگنے کا مطالبہ کیا، فارس خبر رساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق عراق کی وزارت خارجہ نے بغداد میں یورپی یونین کے نمائندے اور غیر ملکی سفارتکاروں کی جانب سے ہم جنس پرستی کے پرچم کو لہرانے کی مذمت کرتے ہوئے ان سے سماجی اور عراقی قوانین کا احترام کرنے کا مطالبہ کیا، مقتدی صدر، عمار الحکیم، حسن الکعبی اور دوسرے عراقی رہنماؤں اور سیاسی اور مذہبی جماعتوں نے اس اقدام کی مذمت کرتے ہوئے یورپی یونین، برطانیہ اور کینیڈا کے سفارتخانوں سے کہا ہے کہ وہ مسلمانوں خاص طور سے عراقی عوام سے معافی مانگیں، ان رہنماوں اور سیاسی اور مذہبی جماعتوں نے وزیراعظم کاظمی سے کہا ہے کہ وہ عراقی رسم و رواج اورمذہب کی کھلم کھلا خلاف ورزی کا سخت نوٹس لیتے ہوئے یورپی اور برطانوی سفیروں کو طلب کرکے رسمی احتجاج کیا جائے، واضح رہے کہ اتوار کے روز عراق میں یورپی یونین کے دفتر، کینیڈا اور برطانیہ کے سفارتخانوں نے بغداد میں پہلی مرتبہ عراقی سرزمین میں ہم جنس پرستوں کا پرچم لہرایا جوعراقی عوام کی سخت نا پسندیدگی اور نفرت کا باعث بنا، مغربی ممالک اور امریکہ و برطانیہ اس ملک میں مغربی طرز کی جنسی آزادی کے خفیہ منصوبے پر عمل کررہے ہیں اور مذہب اسلام کو بدنام کرنے کیلئے مغربی نشریاتی اداروں کو پروپیگنڈے پر مشتمل رپورٹس نشر کرانے کیلئے فنڈنگ کررہے ہیں۔

Share.

About Author

Leave A Reply