نیٹوکانفرنس: صدرزرداری خالی ہاتھ واپس جائیں گے،امریکی اخبار

0

پاکستان کےصدر زرداری کو سرد مہری کا سامنا رہا، صدر باراک اوباما نے ملنے سے ہی انکار کردیا ہے،افغان صدر کو پذیرائی ملی

واشنگٹن (میزان نیوز) امریکہ کے شہر شکاگو میں نیٹو سربراہ اجلاس کے موقع پر نیٹو سپلائی کی بحالی کا معاملہ امریکی میڈیا کا نمایاں موضوع بنا ہوا ہے۔ امریکی اخبارات نے اس خبر کو نمایاں جگہ دی کہ صدر باراک اوباما کی طرف سے پاکستان کے صدر آصف علی زرداری سے ملاقات ان کی مصروفیات کا حصہ ہی نہیں۔ کانفرس کے موقع پر جہاں افغانستان کے صدر حامد کرزئی کو خاصی پذیرائی ملی وہیں نیٹو کی دعوت پر شرکت کرنے والے پاکستان کے صدر آصف علی زرداری کو سرد مہری کا سامنا رہا اور اس بات کا امریکی میڈیا نے باقائدہ تذکرہ بھی کیا ہے۔ امریکی اخبار نیویارک ٹائمز نے اپنے صحفہ اول کی خبر میں یہاں تک دعویٰ کیا کہ صدر باراک اوباما نے صدر آصف علی زرداری سے ملنے سے ہی انکار کردیا ہے اور اب وہ خالی ہاتھ واپس جائیں گے۔

خیال رہے کہ نیٹو اجلاس کے دوسرے روز صدر اوباما نے غیر رسمی طور پر صدر زرداری سے مختصر ملاقات کی ہے۔ نیٹو اجلاس کی رپورٹنگ کرنے والے پاکستانی صحافیوں کے مطابق بھی اجلاس میں افغانستان کی زبردست پذیرائی ہوئی اور صدر زرداری کے ساتھ سرد مہری بہت نمایاں اور محسوس ہونے والی چيز تھی۔ اخبار شکاگو ٹربیون کے مطابق اجلاس میں ایساف کی مدد کرنے پر وسطیٰ ایشیائی ریاستوں اور روس کا بھی شکریہ ادا کیا گیا لیکن پاکستان کا قابل ذکر حد تک کوئی ذکر نہیں کیا گیا۔اخبار نے مزید لکھا کہ صدر باراک اوباما کی طرف سے وسطیٰ ایشیائی ریاستوں اور روس کا شکریہ ادا کرتے ہوئے پاکستان کے صدر آصف علی زرداری جو کانفرنس کی اسی گول میز پر ہی اپنی نشت پر براجمان تھے، صدر باراک اوباما کو انہماک سے دیکھتےرہے۔ امریکی اخبار لاس اینجلس ٹائمز نے اپنی ایک رپورٹ میں نمایاں سرخی لگائی کہ’نیٹو کانفرنس میں سربراہان کا گرمجوشی سے استقبال لیکن پاکستان نہیں

Share.

About Author

Leave A Reply