شمالی وزیرستان: خفیہ اطلاع پر فوجی ایکشن 4 اہلکار شہید 7 دہشتگرد ہلاک

0

مسلح افواج کے شعبہ تعلقات عامہ کے مطابق کارروائی کے دوران سات دہشت گردوں کو ہلاک کردیا گیا فائرنگ کےشدید تبادلے کے نتیجے میں ایک افسر سمیت 4 سکیورٹی اہلکار شہید ہوگئے اسلحہ و بارود اور دھماکہ خیز مواد بھی برآمد کرلیا گیا ۔۔۔

پشاور (میزان نیوز) خیبر پختونخوا کے علاقے شمالی وزیرستان میں دہشت گردوں کے خلاف کارروائی کے دوران فائرنگ کے تبادلے میں پاک فوج کے ایک افسر سمیت 4 جوان شہید ہوگئے جبکہ 7 دہشت گردوں کو بھی مار دیا گیا، پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کی جانب سے جاری اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ ضلع شمالی وزیرستان کے علاقے دتہ خیل کے قریب دہشت گردوں کی موجودگی کی مصدقہ خفیہ اطلاع پر سکیورٹی فورسز نے ماما زیارت میں کارروائی کی، آئی ایس پی آر کے مطابق دتہ خیل کے جنوب مغرب میں 7 کلومیٹر دور ماما زیارت کے علاقے کو سکیورٹی فورسز نے گھیرے میں لیا تو دہشت گردوں نے ٹھکانوں سے فرار ہونے کیلئے فائر کھول دیا، بیان میں کہا گیا ہے کہ کارروائی کے دوران 7 دہشت گردوں کو ہلاک کردیا گیا، آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ فائرنگ کے شدید تبادلے کے نتیجے میں ایک افسر سمیت 4 سکیورٹی اہلکار شہید ہوگئے اور ایک زخمی ہوگیا، کارروائی کے حوالے سے مزید کہا گیا کہ ‘ٹھکانے کو خالی کروانے کے دوران بڑی تعداد میں اسلحہ و بارود اور دھماکہ خیز مواد بھی برآمد کرلیا گیا، آئی ایس پی آر کے مطابق شہید ہونے والے افسر اور جوانوں میں لاہور سے تعلق رکھنے والے 26 سالہ لیفٹننٹ آغا مقدس علی، پنجاب کے شہر لیہ سے تعلق رکھنے والے 36 سالہ لانس حوالدار قمر ندیم اور 24 سالہ سپاہی محمد قاسم اور پنجاب کے ہی ضلع نارووال سے تعلق رکھنے والے 23 سالہ سپاہی توصیف شامل ہیں، تفصیلات میں بتایا گیا ہے کہ شہید لانس حوالدار قمر ندیم شادی شدہ تھے اور ان کے لواحقین میں بیوہ، 2 بیٹے اور ایک بیٹی شامل ہیں، یاد رہے کہ 9 مارچ کو ڈیرا اسمٰعیل خان (ڈی آئی خان) میں سکیورٹی فورسز نے دہشت گردی کی بڑی کارروائی کو ناکام بناتے ہوئے آپریشن کے دوران 2 دہشت گردوں کو ہلاک کردیا تھا جبکہ فائرنگ کے تبادلے میں پاک فوج کے کرنل مجیب الرحمٰن شہید ہوگئے تھے۔

Share.

About Author

Leave A Reply