سندھ حکومت کیساتھ مل کر چلنے کی خواہش پوری نہیں ہوئی، گورنر سندھ

0

سندھ میں پیپلزپارٹی کی 10 سالوں سے حکومت نے کراچی سمیت اندرون سندھ کو مسائلستان بنایا ہے اور حکمراں جماعت کی کرپشن داستانیں زبان زد عام ہیں جبکہ سندھ بھرپور مالی وسائل کا حامل ہے ۔۔۔۔

کراچی (میزان نیوز) گورنر سندھ عمران اسماعیل کا کہنا ہے کہ بہت کوشش کی سندھ حکومت کے ساتھ مل کر چلیں مگر افسوس کہ بہتر ردعمل نہیں ملا، کراچی میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے گورنر سندھ عمران اسماعیل کا کہنا تھا کہ مجھے نہیں معلوم سندھ حکومت کو کیا اعتراض ہے، اپیکس کمیٹی کے اجلاس میں مدعو نہ کیا جانا سمجھ میں نہیں آتا، گورنر سندھ نے کہا کہ تعمیراتی صنعت معیشت کیلئے سود مند ہے، وفاق کی معاونت سے کراچی میں جاری منصوبوں کی نگرانی کرتا رہونگا اور یہ میرا آئینی فریضہ ہے، سندھ حکومت کو بھی نگرانی میں شامل ہونے کی دعوت دی جو انہوں نے قبول نہیں کی، سندھ حکومت کو کہا ہے کہ اگر اپنا حصہ نہیں ڈالنا چاہتے تو پھر بھی آکر فنڈز کی مانیٹرنگ کا حصہ بنیں، خیال رہے کہ سندھ میں پیپلزپارٹی کی حکومت آصف زرداری اور اُن کے خاندان اور پیپلزپارٹی کے رہنماؤں کی کرپشن کی تحقیقات سے نالاں ہیں، کرپشن کی یہ تحقیقات احتساب کا ادارہ نیب کررہا ہے جوکہ وفاقی حکومت کے ماتحت نہیں ہے، اس کے باوجود پیپلزپارٹی کی سندھ حکومت اس کا ذمہ دار تحریک انصاف کی وفاقی حکومت کو سمجھتی ہے، 2018ء کے انتخابات کے بعد وفاق اور پاکستان کے 3 صوبوں میں تحریک انصاف کی حکومت قائم ہوئی جبکہ صرف سندھ میں دیہی سندھ کی بالادستی کی وجہ سے سندھ میں پیپلزپارٹئ کی حکومت قائم ہوئی ہے، دیہی سندھ کی دوسری بڑی سیاسی قوت مسلم لیگ فنکشنل کی عدم فعالیت نے پیپلزپارٹی کو خالی میدان میں گول کرنے کا موقع فراہم کیا ہے، سندھ میں پیپلزپارٹی کی مسلسل 10 سالوں سے جاری حکومت نے کراچی سمیت اندرون سندھ کو مسائلستان بنادیا ہے اور حکمراں جماعت کی کرپشن کی داستانیں زبان زد عام ہیں جبکہ سندھ پاکستان کا دوسرا بڑا صوبہ ہے جو بھرپور مالی وسائل کا حامل ہے۔

Share.

About Author

Leave A Reply