عرب وزرائے خارجہ پاکستان آئے مگر بھارتی مظالم پر خاموش رہے –

0

وزیراعظم عمران خان کے مطابق بھارتی اقدامات سے خطے کے امن و سلامتی کو شدید خطرات لاحق ہےعالمی برادری بھارت پر دباؤ ڈالے کہ وہ غیر قانونی اقدامات واپس لے سعودی عرب اورعرب امارات اس سلسلے میں اہم کردار ادا کر سکتے ہیں۔۔۔

اسلام آباد (میزان نیوز) سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات پاکستان کا ایک روزہ دورہ مکمل کرنے کے بعد واپس چلے گئے، پاکستان میں قیام کے دوران دونوں ملکوں کے وزرائے خارجہ نے مسئلہ کشمیر اور کشمیریوں کے خلاف بھارت کی ریاستی دہشت پر لب کشائی نہیں کی اور ایک روزہ دورے کے دوران دونوں اہم مسلم ملکوں کے وزرائے خارجہ نے پریس کو مکمل طور پر نظرانداز کیا، واضح رہے کہ مقبوضہ کشمیر کی خصوصی آئینی حیثیت ختم کئے جانے کے بعد سعودی عرب نے بھارت میں پندرہ ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کے عمل کو تیز کردیا جبکہ متحدہ عرب امارات نے بھارتی وزیراعظم نرنندر مودی کو متحدہ عرب امارات کا سب سے بڑا سویلین تمغہ دیا ہے، جس پر پاکستان میں ہر سطح پر مذمت کی گئی، دونوں ملکوں کا دورہ پاکستان کا پس منظر پاکستانی ناراضگی کو کم کرنا تھا، دونوں وزرائے خارجہ نے وزیراعظم عمران خان سے سعودی وزیر مملکت برائے امور خارجہ عادل بن احمد الجبیر اور متحدہ عرب امارات کے وزیر خارجہ شیخ عبداللہ بن زید بن سلطان النہیان نے وزیراعظم آفس میں ملاقات کی، وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی بھی ملاقات میں موجود تھے، اسلام آباد کی طرف سے جاری اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ ملاقات میں مقبوضہ کشمیر میں بھارت کے غیر قانونی اقدامات پر تبادلہ خیال کیا گیا، وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان کو مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی بگڑتی ہوئی صورتحال پر گہری تشویش ہے، انہوں نے کہا کہ گزشتہ ایک ماہ سے مقبوضہ کشمیر میں مکمل لاک ڈاؤن ہے، مقبوضہ کشمیر میں نافذ کرفیو فوری طور پر اٹھایا جائے جبکہ کشمیری عوام کے بنیادی حقوق کا احترام ہونا چاہیئے، عمران خان نے کہا کہ بھارتی اقدامات سلامتی کونسل کی قراردادوں اور عالمی قوانین کی واضح خلاف ورزی ہیں، بھارت دنیا کی توجہ ہٹانے کیلئے بے بنیاد فلیگ آپریشن کا ڈرامہ کر سکتا ہے، جبکہ بھارتی اقدامات سے خطے کے امن و سلامتی کو شدید خطرات لاحق ہو گئے ہیں، انہوں نے عالمی برادری سے مطالبہ کیا کہ وہ بھارت پر دباؤ ڈالے کہ وہ غیر قانونی اقدامات واپس لے، ان کا کہنا تھا کہ سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات اس سلسلے میں اہم کردار ادا کر سکتے ہیں، اس موقع پر سعودی عرب اور یو اے ای کے وزرائے خارجہ کا کہنا تھا کہ وہ اپنے اپنے ممالک کی قیادت کی ہدایت پر پاکستان کا دورہ کر رہے ہیں۔

Share.

About Author

Leave A Reply