سعودی عرب کا تیل کی پیداوار میں کمی کا فیصلہ،انڈیا کیوں ناراض ہوا

0

سعودی عرب سمیت اوپیک ممالک خام تیل کی یوپیہ پیداوار میں نو کروڑ 70 لاکھ بیرل کم کرنیکا اعلان کیا ہے جس سے تیل کی قیمتوں میں اضافہ ہوگا اور انڈیا سمیت ترقی پذیر ملکوں کی کورونا کے بعد معیشت پر اس بوجھ کو برداشت نہیں کرسکیں گے۔۔۔

نئی دہلی (میزان نیوز) عالمی وبا کووڈ-19 سے پیدا ہونے والی معاشی گراوٹ کے بعد انڈیا کی معیشت قدرے بحالی کی جانب گامزن ہے، ایسے حالات میں جب پیٹرولیم مصنوعات کی مانگ بڑھ رہی ہے سعودی عرب نے اعلان کیا ہے کہ وہ خام تیل کی یومیہ پیداوار میں دس لاکھ بیرل کی کمی کرنے جارہا ہے اور دیگر اوپیک ممالک نے بھی یوپیہ پیداوار میں نو کروڑ 70 لاکھ بیرل کم کرنے کا اعلان کرچکے ہیں، خام تیل کی پیداوار میں کمی سے تیل کی قیمتوں میں اضافہ یقینی ہے، جو ترقی پذیر ملکوں کی معیشت کیلئے کووڈ-19 سے زیادہ خطرناک ہے، انڈیا ایک ایسا ملک ہے جو اپنی تونائی کی 80 فیصد ضرورت تیل درآمد کرکے پورا کرتا ہے، امریکہ اور چین کے بعد انڈیا دنیا میں خام تیل کا تیسرا بڑا صارف ہے، انڈیا کے وزیرِ تیل و گیس دھرمندرا پردھان نے ایک ٹوئٹ میں کہا کہ میرا اصرار منصفانہ قیمتوں پر ہے جو کہ صارفین اور تیل پیدا کرنے والوں دونوں کے مفاد میں ہے، پیداوار میں کمی عالمی معاشی بحالی کو متاثر کرئے، دھرمندرا پردھان نے اوپیک کے سیکرٹری جنرل محمد برکنڈو سے کہا ہے کہ انڈیا کو توقع تھی کہ اوپیک ممالک خام تیل کی پیداوار میں اضافہ کریں گے اور قیمتیں کم کریں گے لیکن اوپیک کے فیصلے سے توانائی کے متبادل ذرائع کو آگے بڑھانا پڑے گا، سعودی عرب سمیت اوپیک ممالک خام تیل کی یوپیہ پیداوار میں نو کروڑ 70 لاکھ بیرل کم کرنیکا اعلان کیا ہے جس سے تیل کی قیمتوں میں اضافہ ہوگا اور انڈیا سمیت ترقی پذیر ملکوں کی کورونا کے بعد معیشت پر اس بوجھ کو برداشت نہیں کرسکیں گے، گذشتہ چند ماہ میں انڈیا میں تیل اور ڈیزل کی قیمت میں تیزی سے اضافہ ہوا ہے۔ بدھ کے روز جے پور میں پٹرول کی قیمت 92.69 روپے تھی جو کہ ملک میں سب سے مہنگا تیل ہے جبکہ چندی گڑھ میں 82.04 روپے فی لیٹر تھی جو کہ سب سے سستا ہے، اوپیک ممالک کی تیل کی پیداوار میں کمی کی وجہ سے قیمتیں مزید بڑھیں گی، سنگاپور میں توانائی کے شعبے کے ماہر شائلیجا نارائن نے بتایا ہے کہ آئندہ ماہ میں خام تیل کی قیمتیں بڑھیں گی جس کی وجہ سے کووڈ کی بعد معاشی بحالی کے مرحلے میں مشکلات آ سکتی ہیں۔

Share.

About Author

Leave A Reply