سشانت سنگھ کی خودکشی کے بعد مایوس بھارتی یہی راستہ اختیار کرنے لگے

0

بالی وڈ اداکار سشانت سنگھ راجپوت کی اچانک خودکشی پر ایڈووکیٹ سدھیر کمار نے ریاست بہار کے شہر مظفر پور کی عدالت میں اداکار کی خودکشی کو قتل قرار دیکر سلمان خان اور کرن جوہر سمیت 8 بولی وڈ شخصیات خلاف مقدمہ دائر کیا تھا۔۔۔

ممبئی (میزان نیوز) بولی وڈ اداکار 34 سالہ سشانت سنگھ راجپوت نے 14 جون کی دوپہر ایک بجے کے قریب بھارتی شہر ممبئی میں اپنی رہائش گاہ پر مبینہ طور پر خودکشی کرلی تھی، اداکار نے تین ملازمین اور ایک دوست کی موجودگی میں 14 جون کی دوپہر کو اپنے کمرے کا دروازہ بند کرکے خود کو پھندے پر لٹکایا تھا، ان کی پوسٹ مارٹم بھی 15 جون کو جاری کی گئی تھی، جس میں دم گھٹنے کو ان کی موت کی وجہ قرار دیا گیا تھا اور 15 جون کو ہی ان کی آخری رسومات ادا کردی گئی تھیں، سشانت سنگھ راجپوت کی اچانک خودکشی کے بعد جہاں بھارت کی سیاسی اور سماجی شخصیات صدمے میں ہیں، وہیں عوام میں بھی ان کی خودکشی کے حوالے سے غم و غصہ ہے، جس وقت 15 جون کو سشانت سنگھ راجپوت کی ممبئی میں آخری رسومات ادا کی جا رہی تھیں عین اسی وقت صدمے میں ان کے کزن کی بیوی سودھا دیوی بھی چل بسی تھیں، بھارتی میڈیا رپوٹس کے مطابق سشانت سنگھ راجپوت کے کزن کی بیوی پہلے ہی کینسر میں مبتلا تھیں تاہم اداکار کی اچانک خودکشی کا سننے کے بعد وہ صدمے میں چلی گئیں اور انہوں نے کھانا پینا چھوڑ دیا، جس کے 24 گھنٹوں بعد ہی وہ چل بسیں، تاہم اب خبریں سامنے آ رہی ہیں کہ اداکار کی خودکشی کی خبریں سننے کے بعد ان کے 2 نوجوان مداحوں نے بھی دلبرداشتہ ہوکر اپنی زندگی کا خاتمہ کرلیا، بھارتی اخبار ٹائمز آف انڈیا نے اپنی رپورٹ میں بتایا کہ ریاست اترپٌردیش کے شہر بیریلی میں ایک نوجوان لڑکے نے اداکار کی خودکشی کے بعد اپنی زندگی کا خاتمہ کرلیا، رپورٹ میں بتایا گیا کہ خودکشی کرنے والا لڑکا نابالغ تھا اور وہ 10 ویں جماعت کا طالب علم تھا، اپنی زندگی کا خاتمہ کرنے والے طالب علم کے اہل خانہ کے مطابق وہ سشانت سنگھ راجپوت کے بہت بڑے مداح تھے، لڑکے کے اہل خانہ کے مطابق اس نے خودکشی سے قبل ایک مختصر خط بھی لکھا کہ جب سشانت سنگھ راجپوت خودکشی کرسکتے ہیں تو وہ کیوں نہیں کرسکتے؟ دوسری جانب نشریاتی ادارے ٹائمز ناؤ نے اپنی رپورٹ میں بتایا کہ ریاست بہار میں بھی سشانت سنگھ راجپوت کی ایک مداح لڑکی نے دلبرداشتہ ہوکر زندگی کا خاتمہ کردیا، رپورٹ کے مطابق بہار کے شہر پٹنا کی 17 سالہ لڑکی پہلے سے ہی ڈپریشن کا شکار تھیں اور گزشتہ چند روز سے ٹی وی پر اداکار کی خودکشی کی بار بار خبریں سننے کے بعد انہوں نے اپنی زندگی کا خاتمہ کیا، رپورٹس کے مطابق لڑکی دسویں جماعت کے نتائج کی منتظر تھیں اور انہیں میڈیکل میں داخلہ لینے کی خواہش تھی مگر گھریلو حالات اور والدین کی علیحدگی اور تنازعات کی وجہ سے وہ ڈپریشن کا شکار تھیں، اشیکا نامی لڑکی سشانت سنگھ راجپوت کی مداح بھی تھیں تاہم ڈپریشن میں ہونے اور بار بار اداکار کی خودکشی کی خبریں سننے کے بعد انہوں نے دلبرداشتہ ہوکر اپنی زندگی کا خاتمہ کیا، خیال رہے کہ اگرچہ اب تک رپورٹس کے مطابق سشانت سنگھ راجپوت نے خودکشی کی تاہم پولیس نے ان کے ممکنہ قتل کی تفتیش بھی شروع کر رکھی ہے اور ابتدائی طور پر ممبئی پولیس یہ جاننے کی کوشش کر رہی ہے کہ ایسی کیا وجوہات تھیں جن کی بناء پر اداکار نے خودکشی کی، پولیس نے 19 جون تک کم از کم ایک درجن افراد کے بیانات بھی ریکارڈ کئے تھے اور بیانات ریکارڈ کروانے والے افراد میں اداکار کے اہل خانہ بھی شامل ہیں، پولیس نے کچھ بولی وڈ فلم سازوں سمیت کچھ اداکاروں کو بھی بیانات ریکارڈ کروانے کیلئے سمن جاری کر رکھے ہیں جب کہ 18 جون کو سشانت سنگھ کی گرل فرینڈ اداکار ریا چکربورتی نے بھی اپنا بیان ریکارڈ کروایا تھا، سشانت سنگھ راجپوت کی اچانک خودکشی پر جون کو ایڈووکیٹ سدھیر کمار اوجھا نامی شخص نے ریاست بہار کے شہر مظفر پور کی عدالت میں سشانت سنگھ کی خودکشی کو قتل قرار دیکر سلمان خان اور کرن جوہر سمیت 8 بولی وڈ شخصیات کے خلاف مقدمہ دائر کیا تھا، سدھیر کمار کا دعویٰ تھا کہ معروف بولی وڈ شخصیات نے ایسے حالات پیدا کیے کہ سشانت سنگھ راجپوت خودکشی جیسے قدم پر مجبور ہوئے۔

Share.

About Author

Leave A Reply