ریپ مجرم کو جنسی صلاحیت سےمحروم کیا جانا چاہیئے،عمران

0

وزیراعظم عمران خان کے مطابق جب وہ حکومت میں آئے تو ملک میں بڑھتے ہوئے جنسی جرائم کے تناظر میں وہ سرِعام پھانسی کے حق میں تھے تاہم انھیں مشورہ دیا گیا کہ ایسا کرنے سے عالمی ردعمل آ سکتا ہے ایسا کرنا پاکستان کے حق میں فائدہ مند نہیں۔۔۔

اسلام آباد (میزان نیوز) پاکستان کے وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ وہ ملک میں ریپ اور بچوں سے جنسی زیادتی کے مجرموں کو سرعام پھانسی یا جنسی صلاحیت سے محروم کرنے کے حامی ہیں اور اس سلسلے میں تازہ قانون سازی کی ضرورت ہے، ان کا کہنا تھا کہ قتل کی طرح قانون میں جنسی جرائم کی بھی درجہ بندی ہونی چاہیئے اور ریپ کے مرتکب مجرموں کو جنسی طور پر ناکارہ بنا دیا جانا چاہیئے، پاکستان کے وزیراعظم کا یہ بیان پاکستان میں ریپ کے ایک حالیہ واقعے کے سخت ردعمل اور ملک کے مخلتف حصوں میں احتجاجی مظاہروں کے بعد سامنے آیا ہے، ریپ کا یہ واقعہ لاہور کے قریب پیش آیا تھا جہاں دو افراد نے رات گئے سڑک کنارے اپنی گاڑی میں مدد کے انتظار میں موجود ایک خاتون کو ان کے بچوں کے سامنے تشدد کا نشانہ بنانے کے بعد ریپ کیا تھا، پاکستان کے وزیراعظم نے پیر کو نیوز چینل کو دیئے گئے انٹرویو میں کہا کہ اس واقعے نے پوری قوم کو ہلا دیا ہے، ان کا کہنا تھا کہ اس واقعے میں ملوث ایک ملزم ماضی میں گینگ ریپ میں ملوث رہ چکا ہے اور اس طرح کے لوگوں سے نمٹنے کیلئے تازہ قانون سازی کی ضرورت ہے، عمران خان کا کہنا تھا کہ ریپ کے معاملے میں فرسٹ ڈگری کا ارتکاب کرنے والوں کو آپریشن کے ذریعے ناکارہ کردیا جانا چاہیئے، ان کا کہنا تھا کہ انھوں نے پڑھا ہے کہ ایسا دنیا کے کچھ ممالک میں بطور سزا کیا جارہا ہے، وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ جب وہ حکومت میں آئے تھے تو ملک میں بڑھتے ہوئے جنسی جرائم کے تناظر میں وہ سرِعام پھانسی کے حق میں تھے تاہم انھیں مشورہ دیا گیا کہ ایسا کرنے سے عالمی ردعمل ہو سکتا ہے ایسا کرنا پاکستان کے حق میں فائدہ مند نہیں کیونکہ یورپی یونین کی جانب سے بین الاقوامی تجارت کی اجازت معطل ہوجائے گی۔

Share.

About Author

Leave A Reply