جنسی زیادتی، رپورٹ آنے بعد لارڈ نذیر دارالامرا سےازخود فارغ ہوگئے

0

دارالامراء کی ضابطہ اخلاق کمیٹی کی رپورٹ میں انہیں 2017ء میں خاتون طاہرہ زمان کی مجبوری کا فائدہ اٹھانے کا مرتکب قرار دیتے ہوئے انھیں ہاؤس سے نکالنے کی سفارش کی نذیر احمد فیصلے کے خلاف کورٹ آف ہیومن رائٹس میں اپیل دائر کرینگے۔۔۔

لندن (میزان نیوز) برطانیہ کے دارالامراء یا ہاؤس آف لارڈز کے رکن لارڈ نذیر احمد نے اپنے خلاف جنسی استحصال کے الزامات پر مبنی ایک رپورٹ سامنے آنے کے بعد ہاؤس سے نکالے جانے سے پہلے خود ہی ریٹائر ہونے کا اعلان کردیا، لارڈ نذیر احمد نے اپنے خلاف جنسی استحصال کے الزامات سے متعلق ہاؤس کی ضابطہ اخلاق کی کمیٹی کی ایک رپورٹ دیکھنے کے بعد یہ فیصلہ کیا ہے، اس رپورٹ میں انھیں ہاؤس سے نکالنے کی سفارش کی گئی ہے، ہاؤس کی ضابطہ اخلاق کمیٹی کی رپورٹ طاہرہ زمان کی 2017 میں دائر کی گئی اس شکایت پر مبنی ہے، جس میں الزام عائد کیا گیا تھا کہ لارڈ نذیر احمد نے ان کی مجبوری کا فائدہ اٹھا کر ان کے ساتھ جنسی تعلقات قائم کیے تھے، رپورٹ میں یہ نتیجہ اخذ کیا گیا ہے کہ لارڈ نذیر احمد نے 2017ء میں اپنے پاس مدد کیلئے آنے والی خاتون طاہرہ زمان کا جذباتی اور جنسی استحصال کیا تھا، لارڈ نذیر احمد کے رویئے کی تحقیق بی بی سی کے حالاتِ حاضرہ کے معروف پروگرام نیوز نائٹ میں کیے گئے انکشافات کے بعد شروع ہوئی تھی، لارڈ نذیر احمد کا کہنا ہے کہ ان کے خلاف لگائے گئے الزمات حقیقت پر مبنی نہیں ہیں اور وہ کمیٹی کے اس فیصلے کے خلاف یورپی کورٹ آف ہیومن رائٹس میں اپیل دائر کریں گے۔

Share.

About Author

Leave A Reply