تہران کے البرز پہاڑی سلسلے میں برفانی طوفان دس کوہ پیما جاں بحق

0

ایران کے دارالحکومت تہران کے شمال میں واقع پہاڑوں میں ہونے والی شدید برف باری کے بعد کم از کم دس کوہ پیما ہلاک اور متعدد لاپتہ ہوگئے ہیں ایران میں حالیہ دنوں میں برف باری اور تیز ہواؤں کے سبب ملک کے اکثر حصوں میں شاہراہیں بند ہوگئی ہیں۔۔۔

تہران (میزان نیوز) ایرانی دارالحکومت تہران کے شمالی پہاڑی علاقے میں برفانی تودے گرنے کے سبب کم از کم دس افراد ہلاک ہوگئے ہیں، ایرانی سرکاری ٹیلی وژن کے مطابق برفانی طوفان کی زد میں چار مختلف علاقے آئے ہیں اور امدادی ٹیمیں متعدد لاپتہ افراد کی تلاش میں مصروف ہیں، البرز پہاڑی سلسلے میں یہ برفانی تودے گرنے کا یہ واقعہ جمعہ کے دن شدید برفباری اور تیز ہواؤں کے بعد پیش آیا، اس علاقے میں برفانی تودے گرنے کے واقعات شاذ ونادر ہی پیش آتے ہیں، اس سے قبل یہ اطلاعات موصول ہوئیں تھیں کہ ایران کے دارالحکومت تہران کے شمال میں واقع پہاڑوں میں ہونے والی شدید برف باری کے بعد کم از کم 10 کوہ پیما ہلاک اور متعدد لاپتا ہوگئے ہیں، برطانوی خبر رساں ادارے رائٹرز کے مطابق ایران میں حالیہ دنوں میں ہونے والی برف باری اور تیز ہواؤں کے سبب ملک کے اکثر حصوں میں شاہراہیں بند ہوگئی ہیں، جب کہ ذرائع آمد و رفت بھی متاثر ہوئے ہیں، سرکاری میڈیا کے مطابق کوہ پیماؤں کے خاندان حکام سے رابطے میں ہیں، جب کہ حکام نے لاپتا کوہ پیماؤں کی تعداد میں اضافے کے خدشات بھی ظاہر کیے ہیں، ہلال احمر میں ایمرجنسی آپریشن کے سربراہ مہدی ولی پور کا کہنا ہے کہ کوہ پیماؤں کی ہلاکت پہاڑوں پر ہوئی، جب کہ ایک کوہ پیما جسے ریسکیو کیا گیا تھا، اس کی موت اسپتال میں ہوئی، مہدی ولی پور کا مزید کہنا تھا کہ کم از کم سات کوہ پیما ابھی بھی لاپتا ہیں، خیال رہے کہ تہران البرز پہاڑی سلسلے کے دامن میں واقع ہے، جہاں کئی اسکائی ریزورٹس موجود ہیں

Share.

About Author

Leave A Reply