تحریک انصاف کےاہم رہنما جہانگیرترین خلاف منی لانڈنگ کامقدمہ

0

مسلم لیگ(ن) کے رہنما حمزہ شہبازشریف اور ان کے بھائی سلمان شہبازشریف کے خلاف مقدمہ درج کرلیا، ایف آئی اے کی جانب سے درج مقدمے میں جہانگیر ترین، علی ترین، حمزہ شہباز اور سلمان شہباز کے خلاف علیحدہ علیحدہ مقدمہ درج کیا گیا ہے۔۔۔

اسلام آباد (میزان نیوز) پاکستان کے وفاقی تحقیقاتی ادارے(ایف آئی اے) نے چینی اور منی لانڈرنگ کی تحقیقات کیلئے پاکستان تحریک انصاف(پی ٹی ائی) کے سینئر رہنما جہانگیر ترین اور ان کے صاحبزادے علی ترین، پاکستان مسلم لیگ(ن) کے رہنما حمزہ شہباز اور ان کے بھائی سلمان شہباز کے خلاف مقدمہ درج کرلیا، ایف آئی اے کی جانب سے درج مقدمے میں جہانگیر ترین، علی ترین، حمزہ شہباز اور سلمان شہباز کے خلاف علیحدہ علیحدہ مقدمہ درج کیا گیا ہے، مسلم لیگ(ن) کے صدر شہباز شریف کے بیٹوں کے خلاف 25 ارب روپے کی منی لانڈرنگ کا مقدمہ دج کیا گیا ہے، ایف آئی اے نے جہانگیر ترین اور ان کے بیٹے علی ترین پر 4.35 ارب روپے کی منی لانڈرنگ کا الزام عائد کرتے ہوئے مقدمہ درج کرلیا، مذکورہ مقدمات میں خیانت، دھوکا دہی اور فراڈ سمیت منی لانڈرنگ کی دفعات شامل کی گئی ہیں، واضح رہے کہ چاروں ملزمان کے خلاف ایف آئی اے میں چینی اسکینڈل سمیت منی لانڈرنگ کی تحقیقات چل رہی تھیں، خیال رہے کہ پی ٹی آئی کے سینئر رہنما جہانگیر ترین کئی ماہ برطانیہ میں گزارنے کے بعد اپنے بیٹے کے ہمراہ پاکستان واپس آگئے ہیں جبکہ وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) نے چینی اسکینڈل سے متعلق تفتیش کیلئے انہیں متعدد مرتبہ طلب بھی کیا تھا، وزیراعظم عمران خان نے رواں سال کے اوائل میں چینی کی بڑھتی ہوئی قیمتوں کو دیکھتے ہوئے شوگر انکوائری کمیشن تشکیل دیا تھا جس کی تحقیقات میں جہانگر ترین سمیت بڑے بڑے ناموں کے ملوث ہونے کا انکشاف کیا گیا تھا جنہوں نے مبینہ طور پر اس بحران سے فائدہ اٹھایا، وزیراعظم عمران خان کے قریبی ساتھی جہانگیر ترین شوگر کمیشن کے اہم ملزمان کی فہرست میں شامل ہونے کے باوجود جون میں خاموشی کے ساتھ انگلینڈ روانہ ہوگئے تھے، وہ انکوائری کمیشن کی جانب سے چینی بحران کی فرانزک آڈٹ رپورٹ جاری کرنے سے قبل ہی ملک سے باہر چلے گئے تھے، برطانیہ سے وطن واپسی پر لاہور کے علامہ اقبال انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر گفتگو کرتے ہوئے جہانگیر ترین نے بتایا کہ وہ علاج کیلئے بیرون ملک گئے تھے اور میں اس مقصد سے گزشتہ 7 سال سے بیرون ملک جا رہا ہوں، علاج مکمل ہونے کے بعد اب وطن واپس آگیا ہوں، جہانگیر ترین کی واپسی کے بعد اسلام آباد میں ایک پریس کانفرنس کے دوران وفاقی وزیر حماد اظہر نے چینی اسکینڈل میں جہانگیر ترین کے ملوث ہونے کے بارے میں کہا تھا کہ حکومت کے سامنے سب برابر ہیں اور کسی کے ساتھ خصوصی رعایت نہیں ہوگی اور تمام معاملات قانون کے مطابق ہوں گے، ان کا کہنا تھا کہ ریاست اور حکومت کے آگے ہر فرد برابر ہے، یہی پاکستان تحریک انصاف کا منشور ہے۔

Share.

About Author

Leave A Reply