بغداد خود کش حملوں میں سعودی شہری ملوث ہیں،📎عراقی انٹیلی جنس

0

امریکہ کی سابق امریکی انتظامیہ نے عراق میں بعض امریکی اڈے عراق فوج کے سپرد تو کردیئے ہیں مگر اس عمل کو جان بوجھ کر سست رکھا گیا ہے عراقی سیاسی جماعتیں سمجھتی ہیں کہ امریکی فوج کی مکمل واپسی تک عراق کو دہشت گردی کا سامنا رہیگا۔۔۔

بغداد (میزان نیوز) عراق کے دارالحکومت بغداد میں جمعرات کو ہونے والے دو خودکش حملوں میں ملوث افراد سعودی شہری تھے، عراقی سکیورٹی اور انٹیلی جنس اہلکاروں کی ابتدائی تحقیقات سے معلوم ہوا ہے کہ بغداد میں خود کش حملے کرنے والے دو دہشت گرد سعودی شہری تھے، یاد رہے کہ جمعرات کو عراق کے دارالحکومت بغداد میں 2 خودکش حملوں کے نتیجے میں 30 افراد جاں بحق اور 73 زخمی ہوگئے تھے، عراقی وزارت داخلہ کے مطابق پہلا خودکش حملہ آور بازار میں داخل ہوا اور طبیعت خراب ہونے کا بہانا بنایا جس پر جیسے ہی لوگ حملہ آور کے گرد جمع ہوئے، اس نے دھماکے سے خود کو اڑالیا جب کہ دوسرے حملہ آور نے اس وقت دھماکے سے خود کو اڑایا جب لوگ امدادی کاموں کیلئے جمع ہوئے، عراق کے بعض علاقوں میں داعش کی نام نہاد خلافت کے خاتمے کے بعد منتشر دہشت گردوں نے ایک سے زائد دہشت گرد گروہ تشکیل دیئے ہیں جبکہ اِن گروہوں کو امریکہ، سعودی عرب اور خطے کے دیگر ملکوں کی مالی مدد اور سیاسی حمایت حاصل ہے جنکا مقصد عراق میں عدم استحکام پیدا کرنا ہے، خیال رہے کہ عراقی پارلیمنٹ گزشتہ سال امریکی فوج کو اپنے ملک سے نکل جانے کا حکم دے چکی ہے، امریکہ کی رخصت ہونے والی امریکی انتظامیہ نے عراق میں بعض امریکی اڈے عراق فوج کے سپرد تو کردیئے ہیں مگر اس عمل کو جان بوجھ کر سست رکھا جارہا ہے، عراق کی سیاسی جماعتیں سمجھتی ہیں کہ امریکی فوج کی مکمل واپسی تک عراق کو دہشت گردی کا سامنا رہے گا۔

Share.

About Author

Leave A Reply