بابری مسجد خلاف فیصلہ مودی نے نفرت کا بیج بویا ہے، محمود قریشی

0

پاکستان کے وزیر خارجہ مطابق گاندھی اور نہرو کا ہندوستان دفن ہوچکا انتہا پسند ہندو حکمراں جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی کے انتہا پسند ہندو رہنما نریندر مودی کا نفرت آمیز ہندوستان اپنی جگہ بناچکا اور نفرت کے بیج بونے کا سلسلہ جاری ہے۔۔۔

اسلام آباد (میزان نیوز) پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے بھارتی سپریم کورٹ کی جانب سے کرتارپور راہداری کھلونے والے دن بابری مسجد سے متعلق فیصلے کو معنیٰ خیز اور خوشیوں کو ماند کرنے کی کوشش قرار دے دیا، انہوں نے کہا کہ گاندھی اور نہرو کا ہندوستان دفن ہوچکا اور بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے انتہا پسند ہندو رہنما نریندر مودی کا نفرت آمیز ہندوستان اپنی جگہ بنا چکا، نجی نیوز چینل سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بھارتی سپریم کورٹ کے مکمل فیصلہ جاری ہونے اور اس کا جائزہ لینے کے بعد ہی وزارت خارجہ اپنے باقاعدہ ردعمل کا اظہار کرے گا، اس ضمن میں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ نریندر مودی کی جانب سے نفرت کے بیج بونے کا سلسلہ جاری ہے پہلے انہوں نے اپنے انتخابی منشور میں بابری مسجد پر مندر بنانے کا وعدہ کیا اور پھر رواں برس میں 5 اگست کو مقبوضہ کشمیر کی خصوصی ختم کردی، انہوں نے کہا کہ بھارت نے سپریم کورٹ کے فیصلے سے قبل ہی دفعہ 144 نافذ کردی گئی تھی جبکہ اجودھیا میں 5 ہزار پیرا ملٹری فورسز تعینات کردیئے اور اسکول اور کالج بند کردیئے، انہیں عارصی جیل میں تبدیل کیا گیا، شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ہندوستان میں مسلمان سمیت دیگر اقلیت پہلے ہی بہت دباؤ میں تھے، اس فیصلے کے بعد ان پر مزید دباؤ بڑھے گا، انہوں نے کہا کہ بھارت نفرت کے بیج بورہا ہے اور ہم امن کی آذان دے رہے ہیں، دوسری طرف پاکستان پیپلز پارٹی کی رہنما شیری رحمٰن نے کہا کہ بابری مسجد سے متعلق بھارتی سپریم کورٹ کا فیصلہ انتہا پسند ہندوؤں اور آر ایس ایس کی نئی روش ہے، نئے ہندوستان کا عکس ہے جسے اچھی طرح سمجھ لینا چاہیئے، انہوں نے کہا کہ بھارتی آئین اور عدالت مسلمانوں سمیت دیگر اقلیتوں کو تحفظ فراہم نہیں کرسکتا، ان کا کہنا تھا کہ عالمی سطح پر بھارت ابھرتی ہوئی معیشت ہے لیکن ان کی سرزمین پر غیرانسانی سلوک کا گراف بھی تیزی سے بڑھ رہا ہے۔

Share.

About Author

Leave A Reply