ایٹمی معاہدہ متعلق امریکہ اور یورپ منافقانہ پالیسی پر چل رہے ہیں

0

ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف کے مطابق امریکہ پابندیوں کو ہٹائے بغیر ایٹمی معاہدے میں واپس نہیں لوٹ سکتا کیونکہ امریکہ نے ہی معاہدے کی خلاف ورزی کی ہے یورپ نے ایران کے پرامن جوہری پروگرام پر تشویش ظاہر کرکے دوہرے معیار کا ثبوت دیا

تہران (میزان نیوز) ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے کہا ہے کہ ایران کے ساتھ طے شدہ جوہری معاہدے کے سلسلے میں یورپ و امریکہ دوغلی اور منافقانہ پالیسی اختیار کئے ہوئے ہیں، ظریف نے ایک انٹرویو کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ یورپ نے ایران کے پرامن جوہری پروگرام پر تشویش کا اظہار کیا ہے اور یہ تشویش بذات خود دوہرے معیار اور نفاق کا مظہر ہے، محمد جواد ظریف نے کہا کہ امریکہ نے ہر اس فریق کے خلاف تادیبی اقدامات کئے جس نے اس کی منشاء پر عمل نہیں کیا جبکہ وہ خود اپنے وعدوں پر قائم نہیں رہا، ایران کے وزیر خارجہ نے کہا کہ امریکہ کی پالیسیوں میں کوئی تبدیلی نہیں آئی ہے جسکا جوبائیڈن صرف دعویٰ کرتے رہے ہیں، انھوں نے کہا کہ مسئلہ یہ ہے کہ اقتصادی پابندی عائد کرنا امریکہ کا وطیرہ بن گیا ہے مگر ایران کے مقابلے میں اسے منہ کی کھانا پڑی ہے، محمد جواد ظریف نے کہا کہ امریکہ پابندیوں کو ہٹائے بغیر ایٹمی معاہدے میں واپس نہیں لوٹ سکتا کیونکہ امریکہ نے ہی معاہدے کی خلاف ورزی کی ہے، انھوں نے کہا کہ اسرائیلی حکومت خطے کی واحد جوہری بم بنانے والی فیکٹری ڈیمونا کی توسیع کررہا ہے پھر بھی یورپ کی جانب سے کسی بھی قسم کی تشویش کا اظہار نہیں کیا گیا۔

Share.

About Author

Leave A Reply