ایرانی سائنسدان قتل، پاکستان کی مذمت، تہران تحمل کا مظاہرہ کرئے

0

پاکستان فلسطین کے دو ریاستی حل 1967ء سے پہلے کی سرحدوں اور بیت المقدس کو بطور دارالحکومت فلسطین کے حل پر یقین رکھتا ہے او آئی سی نے بھارت سے مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں اور قتلِ عام روکنے کا مطالبہ کیا ہے۔۔۔

اسلام آباد (میزان نیوز) پاکستان نے ایرانی جوہری سائنسدان محسن فخری زادے کے قتل کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے ایران پر زور دیا ہے کہ وہ تحمل کا مظاہرہ کرتے ہوئے کشیدگی سے گریز کرے، دفتر خارجہ کے ترجمان زاہد حفیظ چوہدری نے ہفتہ وار بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) کے وزرائے خارجہ کا دو روزہ اجلاس نیامے نائجر میں منعقد ہوا، جس میں فلسطین اور جموں و کشمیر پر تفصیلی بات چیت ہوئی، انہوں نے بتایا کہ دوران اجلاس ایک متفقہ اور ٹھوس قرارداد میں او آئی سی نے جموں و کشمیر پر سخت الفاظ میں مؤقف دیتے ہوئے بھارت سے مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں، محاصرے اور ماورائے عدالت قتلِ عام روکنے کا مطالبہ کیا، ان کا کہنا تھا کہ اعلامیے میں اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل اور او آئی سی کی قراردادوں کے مطابق کشمیریوں کی خواہشات کے تناطر میں مسئلہ کشمیر کو حل کرنے پر زور دیا گیا، انہوں نے کہا کہ او آئی سی وزرائے خارجہ کا آئندہ 47 واں اجلاس اسلام آباد میں کرانے کا فیصلہ کیا گیا ہے، ان کا کہنا تھا کہ وزرائے خارجہ کونسل نے متفقہ طور پر اسلاموفوبیا کے خلاف پاکستان کی قرارداد کو منظور کیا، زاہد حفیظ چوہدری نے کہا کہ قرراداد میں قرآن پاک کی بے حرمتی اور حضرت محمد مصطفیٰؐ کے توہین آمیز خاکوں کی اشاعت پر تحفظات کا اظہار کیا گیا جس کی وجہ سے دنیا کے 1.8 ارب مسلمانوں کے جذبات مجروح ہوئے، زاہد حفیظ چوہدری نے اسرائیل کی جانب سے مقبوضہ فلسطین میں نئی آباد کاری کے ٹینڈر جاری کرنے پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہم مقبوضہ فلسطین میں نئی آباد کاری کی اسرائیلی کوششوں کی شدید مذمت کرتے ہیں، ہمارے لیے فلسطینیوں کا حق استصواب رائے اہم ہے، انہوں نے پاکستان کے مؤقف کو دہراتے ہوئے کہا کہ پاکستان فلسطین کے دو ریاستی حل 1967ء سے پہلے کی سرحدوں اور القدس کے بطور دارالحکومت فلسطین کے حل پر یقین رکھتا ہے۔

Share.

About Author

Leave A Reply