اہل تشیع کی ٹارگٹ کلنگ میں ملوث لشکر جھنگوی کے 4 کارندے گرفتار

0

ایس ایس پی وسطی اسلم راؤ کے مطابق گرفتار ملزمان کا تعلق کالعدم تنظیم لشکر جھنگوی سے ہے دہشت گرد پولیس اہلکاروں، اہل تشیع اور بوہرہ کمیونٹی کے افراد کی ٹارگٹ کلنگ سمیت سما ٹی وی کی ڈی ایس این جی پر حملے میں ملوث تھے ۔۔۔۔

کراچی (میزان نیوز) سندھ پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ اہل تشیع اور بوہرہ کمیونٹی کے افراد کی ٹارگٹ کلنگ میں ملوث کالعدم تنظیم کے 4 کارندوں کو گرفتار کرلیا، ایس ایس پی وسطی عارف اسلم راؤ کے مطابق زیر حراست ملزمان کا تعلق لشکر جھنگوی سے ہے جو پولیس اہلکاروں، اہل تشیع اور بوہرہ کمیونٹی کے افراد کی ٹارگٹ کلنگ سمیت سما ٹی وی کی ڈی ایس این جی پر حملے میں ملوث تھے، انہوں نے بتایا کہ ملزمان نے بھتے کی رقم نہ ملنے پر تاجروں کو بھی قتل کیا، ایس ایس پی وسطی کا کہنا تھا کہ کالعدم تنظیم کے کارندے اجرتی قاتل بھی ہیں، عارف اسلم راؤ نے بتایا کہ ملزمان شہر کا امن برباد کرنے کا منصوبہ بنارہے تھے تاہم اسے ناکام بنا دیا گیا، اس ضمن میں ایس ایس پی وسطی کے ہمراہ ایس ایس پی انویسٹی گیشن محمد طارق نواز نے تفصیلات بتائیں کہ ایف بی انڈسٹریل ایریا میں مسلح موٹرسائیکل سواروں نے اعجولی خان کو 17 جولائی 2019 کو قتل کردیا گیا تھا، انہوں نے بتایا کہ قتل کے تحقیقات کے دوران پولیس نے مقتول کی بیوی شگفتہ اور اس کے مبینہ آشنا زرولی کو گرفتارکرلیا تھا، محمد طارق نواز نے بتایا کہ دونوں ملزمان نے قتل کا منصوبہ بنانے کا جرم قبول کیا اور ان کی نشاندہی پر پولیس نے کالعدم تنظیم کے دو مشتبہ افراد گورا خان اور شاہد ہمایوں کو گرفتار کیا، ان کا کہنا تھا کہ دوران تفتیش دونوں مشتبہ ملزمان نے اقرار کیا کہ انہوں نے اعجولی خان کو قتل کیا اور ساتھ ہی اپنے دیگر ساتھیوں کے بارے میں معلومات فراہم کیں، ایس ایس پی نے بتایا کہ فراہم کردہ معلومات کے نتیجے میں محمد ہاشم اور محمد فہیم کو حراست میں لیا گیا، انہوں نے بتایا کہ گورا خان، فہیم اور ہاشم کالعدم تنظیم کے فعال رکن تھے جبکہ شاہد گورا خان کا ساتھی تھا، محمد طارق نواز نے بتایا کہ فہیم نے 2 پولیس اہلکاروں، اہل تشیع اور بوہرہ کمیونٹی کے 3 افراد، سما ٹی وی کے کیمرہ کو قتل کرنے کا اعتراف کیا ہے، پولیس نے دعویٰ کیا کہ ملزم نے دیگر سنگین جرائم کا بھی اقرار کیا۔

Share.

About Author

Leave A Reply