انڈیا ریاستی دہشت گردی چھپانے کیلئے پاکستان پر جعلی حملہ کرسکتا ہے

0

کشمیر میں انڈیا تین طرفہ سوچ پر عمل پیرا ہے کشمیریوں کے خلاف طاقت کا بہیمانہ استعمال جبکہ خواتین اور بچوں کے خلاف پیلٹ گننز کا استعمال کے ذریعے مقبوضہ خطے پر غیرقانونی قبضہ کرکے اہلِ کشمیر کو حق خودارادیت سے محروم کیا جائے۔۔۔

اسلام آباد (میزان نیوز) پاکستان کے وزیراعظم نے مقبوضہ کشمیر پر انڈین قبضے کو طول دینے کیلئے مودی سرکار کے عزائم بے نقاب کیا ہے، اپنی ٹوئٹ میں وزیر اعظم نے کہا کہ مقبوضہ جموں و کشمیر کے حوالے سے مودی کا آر ایس ایس  کے زیر اثر نظریہ نہایت واضح ہے، وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ انڈیا کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کو دہشت گردی قرار دینے کی کوشش کررہا ہے تاکہ مقبوضہ کشمیر میں ریاستی دہشت گردی سے دنیا کی توجہ ہٹائی جاسکے، اتوار کو سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ایک پیغام میں وزیر اعظم نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں مودی کا آر ایس ایس سے متاثرہ نظریہ بہت واضح ہے اور غیرقانونی الحاق سے کشمیریوں کو ان کے حق سے محروم رکھنا، طاقت کا بہیمانہ استعمال اور غیر انسانی سلوک اس کی مثال ہے، انہوں نے کہا کہ کشمیر میں انڈیا تین طرفہ سوچ پر عمل پیرا ہے جس کے تحت کشمیریوں کے خلاف طاقت کا بہیمانہ استعمال کیا جا رہا ہے اور خواتین اور بچوں کے خلاف غیر انسانی ہتیھار پیلٹ گننز استعمال کی جارہی ہیں، مقبوضہ خطے پر غیر قانونی قبضے کے ذریعے اہلِ کشمیر کو حق خودارادیت سے محروم کیا جائے، ان کا کہنا تھا کہ اس تین طرفہ منصوبے کے تحت انڈیا کی کوشش ہے کہ بچوں اور خواتین کے خلاف پیلٹ گنز سمیت غیرانسانی اسلحے کے بل پر پورے جبر سے انہیں کچلا جائے اور کشمیر میں لاک ڈاؤن ادویات و خوراک سمیت بنیادی اشیائے ضروریات سے محروم کرنے کیلئے نافذ کیا جائے، وزیر اعظم نے مزید کہا کہ انڈیا کی کوشش ہے کہ اہل کشمیر خصوصاً نوجوانوں کی بڑے پیمانے پر گرفتاریوں اور ذرائع مواصلات منقطع کرکے مقبوضہ کشمیر کو دنیا سے کاٹ ڈالا جائے، انہوں نے کہا کہ بڑے پیمانے پر نوجوانوں سمیت کشمیریوں کو قید رکھا گیا ہے اور مواصلات کے تمام ذرائع معطل کرکے کشمیر کو دنیا سے الگ تھلگ کرکے انڈیا کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کو دہشت گردی قرار دینے کی کوشش کر رہا ہے، وزیراعظم عمران خان نے خدشہ ظاہر کیا کہ کشمیریوں کی خودارادیت کیلئے جدوجہد کے حق کو پاکستان کی ایما پر کی جانے والی دہشت گردی کا رنگ دے کر بھارت کی کوشش ہے کہ مقبوضہ جموں و کشمیر میں جاری ریاستی دہشت گردی سے دنیا کی توجہ ہٹائے اور پاکستان کے خلاف ایک جعلی کارروائی کے امکانات پیدا کیے جائیں۔

Share.

About Author

Leave A Reply