انتخابات 2018ء: کوئٹہ میں پولینگ دوران خود کش حملہ 31 افراد ہلاک

0

دھماکے کے فوری بعد سکیورٹی اہلکاروں نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا اور تحقیقات کا آغاز کردیا پولیس کے مطابق دھماکا ایک پولنگ اسٹیشن تعمیر نو ماڈل اسکول کے قریب فورسز کے قافلے پر ہوا۔۔۔۔۔

کوئٹہ (میزان نیوز) پاکستان کا سورش زدہ صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ کے مشرقی بائی پاس پر خود کش دھماکے کے نتیجے میں پولیس اہلکاروں سمیت 31 افراد جاں بحق جبکہ متعدد افراد زخمی ہوگئے، پولیس کے مطابق دھماکا مشرقی بائی پاس پر اس وقت ہوا جب پولیس کے ایک سینئر افسر کا قافلہ وہاں سے گزر رہا تھا، آئی جی پولیس بلوچستان محسن بٹ نے اس دھماکے میں پولیس اہلکاروں سمیت 25 افراد کے جاں بحق ہونے کی تصدیق کی، ساتھ ہی انہوں نے بتایا کہ خودکش حملہ آور نے ڈی آئی جی کے قافلے کو نشانہ بنانے کی کوشش کی، پولیس کے مطابق دھماکے میں زخمی ہونے والے افراد کو فوری طور پر سول ہسپتال منتقل کردیا گیا، تاہم دھماکے کے فوری بعد سکیورٹی اہلکاروں نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا اور تحقیقات کا آغاز کردیا، پولیس کے مطابق دھماکا ایک پولنگ اسٹیشن تعمیر نو ماڈل اسکول کے قریب فورسز کے قافلے پر ہوا۔

Image result for quetta blast

جہاں اسکول میں پولنگ کا عمل جاری تھا، جو دھماکے سے معطل ہوگیا، ادھر سول ہسپتال کوئٹہ کے ترجمان کے مطابق مشرقی بائی پاس پر ہونے والے دھماکے میں 25 افراد ہلاک جبکہ دو درجن سے زائد افراد زخمی ہوئے ہیں، ترجمان کے مطابق دھماکے میں زخمی ہونے والے افراد میں سے 8 کی حالت تشویش ناک ہے جبکہ شہریوں سے خون کے عطیات کی اپیل کی گئی ہے، دھماکے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ڈی آئی جی آپریشن نے دھماکے میں 31 افراد کے جاں بحق ہونے کی تصدیق کی اور بتایا کہ اس دھماکے میں قانون نافذ کرنے والے اداروں کو نشانہ بنایا گیا، انہوں نے کہا کہ دھماکا خیز مواد کے حوالے سے ابتدائی طور پر یہ کہا جاسکتا ہے کہ اس میں بال بیرنگ کا استعمال کیا گیا، تاہم حتمی رپورٹ فارنزک معائنے کے بعد ہی معلوم ہوسکے گی، ان کا کہنا تھا کہ پولیس ہمیشہ نشانے پر رہی ہے لیکن ہمارے سینئر افسران سمیت تمام لوگ میدان میں موجود ہیں، یاد رہے کہ صوبہ بلوچستان گزشتہ کافی عرصے سے دہشت گردوں کے نشانے پر ہے اور یہاں متعدد واقعات میں سیکڑوں افراد جاں بحق ہوچکے ہیں، یاد رہے کہ صوبہ بلوچستان گزشتہ کافی عرصے سے دہشت گردوں کے نشانے پر ہے اور یہاں متعدد واقعات میں سیکڑوں افراد جاں بحق ہوچکے ہیں۔

Share.

About Author

Leave A Reply