امریکہ ایک مرتبہ پھر مذاکرات کیلئے آئیگا، افغان طالبان نے آس لگالی

0

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے سوشل میڈیا پر جاری پیغام میں کہا تھا کہ یہ بات شاید کسی کو بھی معلوم نہیں کہ طالبان کے اہم رہنما اور افغان صدر مجھ سے کیمپ ڈیوڈ میں علیحدہ علیحدہ خفیہ ملاقات کرنے والے تھے جو صدر ٹرمپ نے منسوخ کردی۔۔۔

ہرات (میزان نیوز) طالبان نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے افغان امن مذاکرات کا سلسلہ معطل کرنے پر پہلے سے زیادہ سخت نتائج کی دھکمی دے دی، خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق افغان طالبان کے ترجمان ذبیع اللہ مجاہد نے کہا کہ ڈونلڈ ٹرمپ نے مذاکرات کا سلسلہ معطل کردیا تاہم اب امریکا کو پہلے کے مقابلے میں غیر معمولی نقصان کا سامنا ہوگا لیکن پھر بھی مسقتبل میں مذاکرات کیلئے دروازے کھلے رہیں گے، واضح رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے طالبان کے ساتھ جاری امن مذاکرات معطل کرنے کا اعلان کرتے ہوئے طالبان رہنماؤں سے آج ہونے والی خفیہ ملاقات منسوخ کردی تھی، جس پر ایک جاری بیان میں ذبیع اللہ مجاہد نے کہا کہ ہمیں یقین ہے کہ امریکی ایک مرتبہ پھر مذاکرات کیلئے آئیں گے، انہوں نے کہا کہ 18 برس پر مشتمل ہماری لڑائی سے امریکیوں پر ثابت ہوچکا ہوگا کہ جب تک افغانستان سے غیرملکی فوجیوں کا انخلا نہیں ہوجائے گا تب تک اطمینان نہیں ملے گا، ان کا کہنا تھا کہ اسی مقصد کیلئے اپنے موجودہ جہاد کو جاری رکھیں گے، علاوہ ازیں امارات اسلامیہ افغانستان کی ویب سائٹ پر طالبان نے جاری بیان میں کہا کہ کل تک امریکا کی مذاکراتی ٹیم پیش رفت سے راضی تھی جبکہ گفتگو خوشگوار ماحول میں اختتام پذیر ہوئی تھی، فریقین معاہدہ کے اعلان اور دستخط کی تیاریوں میں مصروف تھے، مزید بتایا گیا کہ معاہدے پر دستخط اور اعلان کے بعد ہم نے بین الافغان مذاکرات کی پہلی نشست کیلئے 23 سمتبر کا دن مقرر کیا تھا، ذبیع اللہ مجاہد نے کہا کہ دنیا کے دیگر ممالک اور عالمی تنظیموں نے بھی افغان امن عمل کی حمایت کی تھی، انہوں نے خبردار کیا کہ اب چونکہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے امارت اسلامیہ سے مذاکراتی سلسلے کو منسوخ کرنے کا اعلان کردیا ہے، جس سے سب سے زیادہ نقصان خود واشنگٹن ہی کو پہنچے گا، افغان طالبان کی جانب سے انکشاف کیا گیا کہ امریکی صدر کی جانب سے امریکا کے دورے کی دعوت ہمیں اگست کے آخر میں ڈاکٹر زلمے خلیل زاد نے دی تھی اور ہم نے دورے کو دوحہ میں معاہدے کے دستخط تک مؤخر کردیا تھا، اس سے قبل امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے سوشل میڈیا پر جاری پیغام میں کہا تھا کہ یہ بات شاید کسی کو بھی معلوم نہیں کہ طالبان کے اہم رہنما اور افغان صدر مجھ سے کیمپ ڈیوڈ میں علیحدہ علیحدہ خفیہ ملاقات کرنے والے تھے۔

Share.

About Author

Leave A Reply