اب پاکستان کو نہیں امریکہ کو ڈومور کہا جائے، بلاول زرداری

0

بےنظیر بھٹو کے تمام کے قاتل سوائے ایک سابق فوجی آمر جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف کے یا تو گرفتار ہوچکے ہیں یا مارے گئے ہیں

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئر پرسن بلاول بھٹو زرداری نے امریکہ سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ نیٹو کی جانب سے مبینہ طور پر سلالہ فوجی چوکی حملے پر پاکستان سے معافی مانگے۔ یہ بات پاکستان کی حکمران پارٹی پاکستان پیپلز پارٹی کے نوجوان سربراہ نے پیر کو نیویارک کے علاقے لانگ آئیلینڈ میں اپنی پارٹی کے کارکنوں اور بعد میں پاکستانی پریس سے خطاب کے دوران کہی۔

بلاول زرداری نے کہا کہ دہشتگردی کے خلاف جنگ ميں پاکستان نے بڑی قربانیاں دی ہیں جن میں پاکستان کے تیس ہزار شہری اور چھ ہزار فوجیوں اور دیگر اہلکاروں کی جانیں دہشتگردی کا شکار ہوئی ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ اب پاکستان کو نہیں بلکہ امریکہ کو ’ڈو مور‘ کہنے کی ضرورت ہے۔

واضح رہے کہ بلاول بھٹو زرداری نے یہ سب ایک ایسے وقت کہا ہے کہ جب انکے والد اور پاکستان کے صدر آصف علی زرداری شکاگو میں نیٹو کانفرنس میں شرکت کے لئے آئے ہوئے ہیں جہاں امریکہ اور پاکستان کے درمیان نیٹو سپلائی لائن پر کافی کشیدگی پائی جاتی ہےاور امریکی صدر اوبامہ نے صدر زرداری سے رسمی ملاقات نہیں کی ہے۔ ایک سوال کے جواب میں بلاول بھٹو نے کہا کہ انکی والدہ اور سابق وزیر اعظم بے نظیر بھٹو کے تمام کے تمام قاتل یا تو گرفتار ہوچکے ہیں یا مارے گۓ ہیں سوائے ایک سابق فوجی آمر جنرل رٹائرڈ پرویز مشرف کے۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ مبینہ طور پر جو لوگ بینظیر بھٹو کے قتل کے پیچھے رجمان ملک کے ہونےکا الزام لگاتےہیں وہ پارٹی کے دوست نہیں بلکہ پارٹی کے اندر پھوٹ ڈالنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستانی میڈیا انکی پارٹی کے خلاف تھوڑی متعصب ہے۔

Share.

About Author

Leave A Reply