یمن : انصار اللہ کا وفد ویانا پہنچ گیا سعودی اتحاد کیساتھ مذاکرات ہونگے

0

یہ پہلا موقع ہے جب سعودی اتحاد اور یمنی حکومت کے اتحاد درمیان براہ راست مذاکرات ہورہے ہیں اس سے قبل سعودی عرب اپنے استکبار کیوجہ سے یمن کےحکمراں اتحاد کو تسلیم کرنے سے انکاری تھا ۔۔۔۔۔

صنعاء (میزان نیوز) یمن کے حکمراں اتحاد انصار اللہ کے رہنما اور سوئیڈن امن مذاکرات میں یمنی حکومت کے نمائندہ محمد عبدالسلام نے کہا ہے کہ امن مذاکرات کو کامیاب بنانے کی پوری کوشش کریں گے، خیال رہے کہ یہ پہلا موقع ہے جب سعودی اتحاد اور یمنی حکومت کے اتحاد کے درمیان براہ راست مذاکرات ہورہے ہیں، اس سے قبل سعودی عرب اپنے استکبار کی وجہ سے یمن کے حکمراں اتحاد کو تسلیم کرنے سے انکاری تھا، یمن کے المسیرہ ٹی وی نے کہا ہے کہ سوئیڈن امن مذاکرات میں شرکت کیلئے انصار اللہ کا وفد ویانا پہنچ گیا ہے، اس رپورٹ کے مطابق سوئیڈن امن مذاکرات میں شرکت کیلئے یمن کی عوامی تحریک انصار اللہ کا طیارہ منگل کی شام صنعا کے بین الاقوامی ہوائی اڈے سے روانہ ہوا، اس وفد کی قیادت انصار اللہ کے ترجمان محمد عبدالسلام کررہے ہیں۔یمن میں جنگ کے خاتمے کے لیے امن مذاکراتاس سے پہلے کویت کے نائب وزیر خارجہ نے اعلان کیا تھا کہ انصاراللہ کا وفد یمن میں کویتی سفیر کے ہمراہ کویت ائیر ویز کے طیارے سے سوئیڈن جائے گا، المسیرہ نے بتایا ہے کہ سوئیڈن کیلئے روانگی سے قبل وفد کے لیڈر محمد عبدالسلام نے صحافیوں سے گفتگو میں اعلان کیا کہ انصاراللہ کا وفد امن مذاکرات کو کامیاب بنانے کی پوری کوشش کرے گا، دوسری طرف یمنی فوج کے توپخانے اور ڈرون یونٹوں نے یمن کے مغربی ساحل پر واقع سولہ کلومیٹر نامی علاقے میں جارح سعودی اتحاد کے فوجی ٹھکانوں پر حملہ کرکے دسیوں جارح سعودی فوجیوں کو موت کے گھاٹ اتار دیا، اس سے پہلے خبروں میں بتایا گیا تھا کہ سعودی عرب کے جنگی طیاروں نے شمالی صوبے صعدہ کے شہر کتاف میں ایک کار پر بمباری کرکے کم سے کم چھ عام شہریوں کو شہید اور زخمی کر دیا، جارح سعودی جنگی طیاروں نے پیر اور منگل کی درمیانی شب بھی یمن کے دارالحکومت صنعا کے نہم علاقے پر بمباری کی، سعودی عرب اور اس کے اتحادیوں نے مارچ دو ہزار پندرہ سے یمن کو اپنی جارحیت کا نشانہ بنا رکھا ہے جس میں اب تک دسیوں ہزار بےگناہ یمنی شہری شہید اور زخمی ہو چکے ہیں جبکہ دسیوں لاکھ افراد بے گھر ہوئے ہیں۔

Share.

About Author

Leave A Reply