پاکستان سے 10 سالوں میں 700 ارب ڈالر کی منی لانڈنگ ہوئی، اکبر

0

گزشتہ دس سال میں پاکستانیوں نے 15 ارب ڈالر کی جائیدادیں دبئی میں بنائیں صرف دس ممالک میں کی گئی تفتیش کے مطابق 5.3 ارب ڈالر کے اثاثوں کا سراغ لگا لیا ہے اور یہ ایک بہت چھوٹا حصہ ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔

اسلام آباد (میزان نیوز) وفاقی حکومت کے مشیر برائے احتساب شہزاد اکبر نے کہا ہے کہ منی لانڈرنگ کے ذریعے بیرون ملک منتقل کئے گئے 700 ارب روپے کا سراغ لگا لیا گیا ہے، وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں وزیراعظم کے مشیر برائے احتساب شہزاد اکبر نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان سے باہر جانے والی رقم 700 ارب روپے سے زائد ہے، اس میں سوئس جائیدادیں شامل نہیں، سوئس حکومت اور برٹش ورجن آئی لینڈ سے تفصیلات ملنے کے بعد یہ رقم بہت بڑھ جائے گی، شہزاد اکبر نے بتایا کہ دس ممالک میں کی گئی تفتیش کے مطابق 5.3 ارب ڈالر کے اثاثوں کا سراغ لگا لیا ہے جو 700 ارب روپے بنتے ہیں اور یہ ایک بہت چھوٹا حصہ ہے، منی لانڈرنگ اور مختلف غیر قانونی طریقوں سے یہ پیسہ پاکستان سے باہر لے جایا گیا ہے جس کے ذریعے باہر اثاثے اور جائیدایں بنائی گئی ہیں، ہم نے تمام بڑے مگرمچھوں کو نوٹس بھجوا دیئے ہیں اور کچھ ممالک میں ان کے پیسے بھی منجمد کروا دیئے ہیں، ان کے جوابات کے بعد باقاعدہ ریفرنسز فائل کیے جائیں گے، شہزاد اکبر نے کہا کہ رکشے اور فالودے والے کے کیسز میں 5 ہزار سے جعلی بینک اکاؤنٹس ہیں جن کے ذریعے بیرون ملک ایک ارب ڈالر کی منی لانڈرنگ کا سراغ لگایا ہے، ایک شخص ان کے اکاؤنٹ میں پیسہ ڈال کر ٹی وی پر دندناتا ہے کہ مجھے ثابت کرکے دکھاؤ، دبئی لینڈ اتھارٹی کے مطابق وہاں رئیل اسٹیٹ میں سب سے زیادہ حصہ پاکستانیوں کا ہے، متحدہ عرب امارات کے وزیر انصاف سے جلد ملاقات ہوگی، کوشش کررہے ہیں یو اے ای حکومت کے ساتھ باہمی قانونی معاہدہ بھی ہو جائے، اس موقع پر وزیرِ اعظم کے معاونِ خصوصی افتخار درانی نے بتایا کہ گزشتہ 10 سال میں پاکستانیوں نے 15 ارب ڈالر کی جائیدادیں دبئی میں بنائیں، مشیر احتساب کا کہنا تھا کہ اقامہ کی آڑ میں منی لانڈرنگ کرنے والے اپنی تفصیلات چھپا لیتے ہیں، کچھ لوگوں نے اپنے ملازمین کے نام پر پیسے رکھے ہوئے ہیں، بینک سسٹم میں اقامہ ہولڈر کا اسٹیٹس بدل جاتا ہے جس سے ان کی تفصیلات منہا ہو جاتی ہیں۔معاون خصوصی برائے احتساب شہزاد اکبر (دائیں) اور سینیٹر فیصل جاوید (بائیں) پریس کانفرنس کر رہے ہیں — فوٹو، ڈان نیوزایم کیو ایم کی منی لانڈرنگ کے معاملے میں بھی بھاری رقم ہے جس پر جلد پیش رفت کا امکان ہے، شہزاد اکبر نے کہا منی لانڈرنگ کرنے والوں کے لیے بری خبر یہ ہے کہ بیرون ملک اکاؤنٹس میں غیر قانونی پیسے اب چھپے نہیں رہ سکیں گے، انہوں نے کہا کہ تحقیقات میں پہلے بڑے افراد پر ہاتھ ڈالا جارہا ہے، کیونکہ صرف 10 ممالک میں 7 سو ارب روپے کی منی لانڈرنگ کی گئی جو منی لانڈرنگ کی رقوم کا ایک چھوٹا حصہ ہے، شہزاد اکبر نے منی لانڈرنگ کا پیسہ واپس پاکستان لانے سے متعلق بات کرتے ہوئے کہا کہ تمام قانونی تقاضے پورے کرنے کے بعد غیر قانونی اثاثے واپس لے آئیں گے۔

Share.

About Author

Leave A Reply