صدر ٹرمپ کا سنہری دور ختم ایوان نمائندگان میں اکثریت کھو دی

0

امریکی نشریاتی ادارےمطابق ایوانِ نمائندگان میں ریپبلکنز کی 194 اور ڈیموکریٹس کی 207 نشستیں ہیں جبکہ سینیٹ میں ریپبلکنز کو51 نشستوں پر برتری حاصل ہے ڈیموکریٹس کے پاس 43 نشستیں ہیں ۔۔۔۔۔۔

واشنگٹن (میزان نیوز) امریکہ کے وسط مدتی انتخابات میں اب تک کے آنے والے نتائج کے رجحانات کے مطابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی رپبلکن پارٹی سینیٹ میں اپنی اکثریت برقرار رکھے گی لیکن ان کی حریف جماعت ڈیموکریٹس ایوان نمائندگان میں آٹھ سال بعد جیت کی راہ پر گامزن ہیں جوکہ صدر ٹرمپ کیلئے مستقبل میں کافی مشکلات کا باعث بن سکتا ہے، امریکا کے وسط مدتی انتخابات میں ڈیموکریٹ اراکینِ نے پارلیمنٹ کے ایوانِ نمائندگان میں اکثریت حاصل کرلی جس کے نتیجے میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے باقی ماندہ 2 سالہ دورِ صدارت میں من مانے فیصلے کے راستے مسدود ہوچکے ہیں، صدارتی انتخاب 2020ء میں ہونے ہیں لیکن ان وسط مدتی انتخابات کو ان کی صدارت کے دو سال پر ایک ریفرنڈم کے طور پر دیکھا جا رہا ہے، وسط مدتی انتخابات میں ایوان نمائندگان کی 435 نشتوں، سینٹ کی ایک تہائی نشتوں کے علاوہ کئی گورنروں اور ریاستی قانون ساز اداروں کی نشتوں پر انتخابات ہوئے ہیں، امریکی ایوان نمائندگان اور سینٹ میں ریپبلکن پارٹی کو برتری حاصل ہے، سینیٹ میں ریپبلکن پارٹی کو ایک ووٹ سے برتری حاصل ہے اور اگر ڈیموکریٹ پارٹی نے پہلے سے دو نشتیں بھی زیادہ حاصل کرلیں تو سینٹ میں ان کی برتری قائم ہو جائے گی، امریکی نشریاتی ادارے سی این این کے مطابق اب تک کے موصول ہونے والے غیر حتمی نتائج کے مطابق ایوانِ نمائندگان میں ریپبلکنز کی 194 اور ڈیموکریٹس کی 207 نشستیں ہیں جبکہ سینیٹ میں ریپبلکنز کو 51 نشستوں پر برتری حاصل ہے اور ڈیموکریٹس کے پاس 43 نشستیں ہیں، اسی طرح 36 گورنروں کے عہدوں میں سے اب تک کے موصول ہو نے والے نتائج کے مطابق 24 عہدے ریپبلکنز جبکہ 19 عہدوں پر ڈیموکریٹ سے تعلق رکھنے والے گورنر کامیاب ہوئے، فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق امریکی نشریاتی اداروں نے نتائج کی تصدیق کی ہے جس میں ریپبلکن کو ایونِ بالا میں دوبارہ اکثریت حاصل ہوگئی ہے، صدر ٹرمپ نے اپنی طاقت کو بچانے کیلئے ریپبلکن پارٹی کے امیدواروں کیلئے سرتوڑ الیکشن مہم چلائی ہے اور ایک دن میں کئی کئی ریاستوں میں انتخابی جلسوں سے خطاب کیا ہے، انھوں نے آخری روز تین مختلف ریاستوں میں تین ریلیوں سے خطاب کیا، صدر ٹرمپ نے ایک ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ انھوں نے پچھلے دو برسوں میں جو کامیابیاں حاصل کی ہیں وہ سب داؤ پر لگی ہوئی ہیں۔سابق صدر براک اوباما ڈیموکریٹ پارٹی کے امیدواروں کیلئے میدان میں اترے تھے، انھوں نے ایک ریلی سے ِخطاب کرتے ہوئے کہا کہ ان انتخابات میں امریکہ کا کردار داؤ پر لگا ہوا ہے، امریکی نیٹ ورک سی این این کے مطابق صدر ٹرمپ وسط مدتی انتخابات کے بعد کوئی خطاب نہیں کریں گے، اس جیت کی مدد سے ڈیموکریٹس صدر ٹرمپ کی انتظامیہ کے خلاف تحقیقات شروع کروا سکتے ہیں، امریکہ میں ایوان نمائندگان کی تمام 435 سیٹوں پر انتخابات تھے اور ان میں خواتین امیدواروں نے خاص طور پر بہت عمدہ کارکردگی دکھائی، کئی ماہرین نے ان انتخابات کو خواتین کا سال قرار دیا۔

Share.

About Author

Leave A Reply